30 09, 2017

چہرے کے مسائل اور ہومیوپیتھک علاج ۔ حسین قیصرانی۔ (Face)

By |2018-04-11T14:25:06+05:00September 30, 2017|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Skin and Hair|Tags: |0 Comments

چہرہ باطن یعنی اندر کی تصویر ہے۔ یہی وجہ ہے کہ چہرے کی تکالیف عام طور پر کسی اندر کے مسئلے کا اظہار ہوتی ہیں۔ چہرے کی اہمیت کا اندازہ اگرچہ ہم سب کو ہے لیکن اِس کے باوجود ہر قسم کے ٹوٹکے، نسخے، اشتہاری دوائیں اور کریمیں ہم اپنے چہرے پر ہی آزماتے اور اکثر اوقات اُس کے نتیجے بھگتتے ہیں۔ صحت اور علاج کے حوالہ سے چہرے کی کسی تکلیف یا بیماری کو کچھ اوپر لگا کر مستقل حل کرنا بہت مشکل ہے۔ ہاں! وقتی طور پر اُسے چُھپایا یا ختم کیا جا سکتا ہے۔ مکمل علاج اور مسئلے کا مستقل حل یہ ہے کہ اُس اندرونی تکلیف کو تلاش اور سمجھ کر علاج کیا جائے جو چہرے پر اپنا اثر ظاہر کر رہی ہے۔ اندرونی صحت کو ٹھیک کر دینے سے اکثر اوقات چہرے کے مسائل از خود حل ہو جاتے ہیں۔ خواتین میں چہرے کے اکثر مسائل دراصل ہارمون کی خرابی کے باعث ہوتے ہیں یا مختلف قسم کی بیرونی ادویات اور کریمیں لگانے کا نتیجہ۔ چہرے اور جسم پر بالوں کا زیادہ ہو جانا اور سر کے بال گرنا بھی بالعموم اِسی وجہ سے ہوتا ہے۔ منفی سوچوں کا دل و دماغ پر حاوی ہونا، [...]

26 09, 2017

لیکیوریا کا ہومیوپیتھک علاج – حسین قیصرانی۔ (leukorrhea)

By |2020-09-13T11:41:22+05:00September 26, 2017|Categories: Genitourinary, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Infectious Diseases|Tags: |2 Comments

لیکوریا یا سیلانِ الرِحم خود کوئی بیماری نہیں بلکہ کئی قسم کی تکلیفوں کا نتیجہ یا اظہار ہے۔ یہ کئی نئے ہونے والے ورم اور بیماریوں کی وجوہات ہوسکتی ہے۔ لیکوریا خواتین کے پوشیدہ عضو سے بہنے والا سادہ پانی کی طرح کا، خراش دار، بد بو کے ساتھ، لیس دار، کچے انڈے کی سفیدی کی طرح، کریم کے رنگ کا گاڑھا یا پیلے رنگ کا مادہ ہوتا ہے۔ اگرچہ یہ ڈسچارج صحت کو برقرار رکھنے کے لئے اہم ہے لیکن خارج ہونے والے مادہ میں تبدیلیوں کو روکنے کے لئے توجہ کی ضرورت بہرحال ہوتی ہے۔ لیکوریا کا اخراج اندرونی تکالیف کی نشاندہی کرتا ہے اِس لئے کسی دوا سے (چاہے وہ ایلوپیتھک ہو، گھریلو ٹوٹکا، حکمت یا ہومیوپیتھک) صرف لیکوریا کا روک دینا مفید نہیں ہو سکتا۔ اولاً تو وہ کچھ عرصہ بعد دوبارہ شروع ہو جائے گا؛ دوسرے اِس کے دب جانے سے کمر درد، گردن میں تکالیف، پیشاب کی جلن، سر درد خاص طور پر گردن سے اوپر آ کر رک جانے والا سر درد، میگرین شروع ہو جاتا ہے۔ علاج اندرونی تکلیف کا کرنا چاہئے کہ جس کی وجہ سے لیکوریا جاری ہوا نہ کہ لیکوریا کو بند کرنے کا۔ جونہی اندر کا ورم یا [...]

21 09, 2017

باتونی پن: ہومیوپیتھک ادویات (Loquacity and Hurriedness)

By |2017-09-21T18:29:22+05:00September 21, 2017|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|Tags: |0 Comments

Loquacity and Hurriedness باتونی پن۔ یہ علامت ہومیوپیتھک ادویات ہائیوسائمس (Hyoscyamus) اور سٹرامونیم (Stramonium) کے علاوہ اَور بھی بہت ساری دواؤں میں پائی جاتی ہے۔ سٹرامونیم میں بسا اوقات باتونی پن شدید غصے میں تبدیل ہو جاتا ہے اور اس وقت مریض کا چہرہ سرخ ہو جاتا ہے؛ اندھیرے سے اُس کی جان جاتی ہے۔ جب کہ ایتھوزا (Aethusa) میں باتونی پن اور خوشی ایک ساتھ دیکھی جا سکتی ہے اور اس کے باتونی پن پر پاگل پن کا شبہ ہونے لگتا ہے۔ ہائیوسائمس کے باتونی پن میں فحش پن کی جھلک بھی ملتی ہے۔ اس کا مریض اعضائے جسمانی کے پردے کا دھیان نہیں کرتا اور فحش گفتگو پر اسے ندامت کا احساس تک بھی نہیں ہوتا۔ ایکونائٹ (Aconitum Napellus) میں جب خوف کا شدید دورہ پڑتا ہے تو بعض اوقات مریض کا باتونی پن بھی ساتھ ہی بڑھ جاتا ہے۔ کینابس انڈیکا (Cannabis Indica) میں مریض کو سردرد شروع ہونے سے پہلے باتونی پن آ جاتا ہے۔ شدید جنسی خواہش کے ساتھ باتونی پن کے حوالے سے وریٹرم البم (Veratrum Album) واحد دوا ہے جو ہومیوپیتھک ریپرٹری میں درج ہے۔ ویریٹرم ایلبم کے ساتھ ٹھنڈا پسینہ اور ٹھنڈی پیشانی کلیدی علامات ہیں۔ ممکن ہے آپ کو کاربو ویجی [...]

19 09, 2017

مرگی(ایپی لیپسی): مرض، تشخیص اور ہومیوپیتھک ادویات و علاج ۔ حسین قیصرانی۔

By |2020-09-13T11:17:04+05:00September 19, 2017|Categories: Autoimmune Disorders, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health|Tags: |1 Comment

مرگی کا مرض زمانہ قدیم سے چلا آ رہا ہے۔ ایک عرصہ تک اِسے بیماری نہیں سمجھا جاتا تھا۔ یونانیوں اور رومیوں کا عقیدہ تھا کہ ایسا جن، بھوت یا پریت کا سایہ پڑنے سے ہوتا ہے۔ یہ عقیدہ ہمارے ہاں بھی عام ہے۔ دورے کے دوران پرانی جوتی یا پیاز سونگھانے کے پیچھے یہ سوچ ہوتی ہے کہ جن بھوت بدبو سے بھاگ جائیں۔ لگتا ہے کہ جن بھوت وغیرہ بدبو سے مانوس ہو چکے ہیں اِس لئے یہ ٹونے ٹوٹکے بیماری کا حل نہیں نکال سکے۔ اگرچہ مرگی کے بارے میں بہت تحقیق ہوئی ہے، نئی نئی باتیں سامنے آئی ہیں اور علاج کے نئے طریقے دریافت ہوئے ہیں لیکن اِس تکلیف کا اصل سبب ابھی تک صحیح طور پر معلوم نہیں ہو پایا۔   مرگی کی علامات عام طور پر مندرجہ ذیل ہوتی ہیں: لیٹے، بیٹھے، سوئے، چلتے پھرتے اچانک اور بے ساختہ ایک بلند آواز ہُوک سی اُٹھتی ہے اور مریض بے ہوش کر طرح تڑ پنے لگتا ہے۔ مریض اگر اس وقت کھڑا ہو تو زور سے زمین پر گر سکتا ہے۔ زبان دانتوں میں آکر زخمی ہو سکتی ہے۔ جسمانی اعضا سخت ہو جاتے ہیں اور سر ایک طرف کو مڑ جاتا ہے۔ چہرہ [...]

15 09, 2017

کی تکالیف اور ہومیوپیتھک علاج – حسین قیصرانی- ۔ Asthma دمہ

By |2018-08-25T19:59:47+05:00September 15, 2017|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Respiratory|Tags: |0 Comments

سانس کی نالیوں میں خرابی یا پھیپھڑوں کی نالیوں کے باریک ہونے کے سبب سانس لینے میں تکلیف کے مرض کو دمہ (Asthma / COPD) سمجھا جاتا ہے۔ دمہ کی تکالیف کی کئی علامتیں ہیں۔ مثلاً؛ بچوں کو دودھ پینے میں دشواری، سانس لیتے وقت سینے میں خرخراہٹ یا سیٹی کی آواز آنا، کھانسی، سانس پھولنا، سینے میں گھٹن کا احساس، دباو اور درد، نیند میں بے چینی یا پریشانی ہونا، تھکان وغیرہ۔ دھول مٹی سے اندرونی یا بیرونی الرجی، موسم کی تبدیلی اور سانس کی نالیوں میں انفیکشن، فضائی آلودگی، حقہ سگریٹ تمباکو کے استعمال کو دمہ یا استھما کی اہم وجوہات جانا جاتا ہے۔ ہومیوپیتھک طریقہ علاج کے حوالہ سے دمہ (استھما) بھی میگرین اور معدہ کے زخم کی طرح ایک اعصابی جسمانی تکلیف ہے۔ ہوا کی نالیوں کے اچانک سکڑنے کی وجہ سے خرخراہٹ اور سانس کی رکاوٹ کے دَورے پڑتے ہیں۔ کسی دوا کے استعمال سے یا ویسے بھی کچھ دیر کے بعد دَورہ مدھم پڑ جاتا ہے اور دوسرا دورہ پڑنے تک مریض ٹھیک نظر آتا ہے۔ دمہ کے مریض کے پھیپھڑوں کی نالیاں کمزور ہو جاتی ہوں اور ریشہ کی پیداوار زیادہ ہو جاتی ہے۔ نالیاں تنگ ہو جانے کے سبب اندر کی ہوا [...]

7 09, 2017

بچوں میں نیند کی کمی – ہومیوپیتھک علاج (حسین قیصرانی)۔

By |2018-05-04T10:33:25+05:00September 7, 2017|Categories: Autism ASD ADHD, Children's Diseases, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|Tags: |0 Comments

رات کی نیند اللہ تعالیٰ کی بہت بڑی نعمت ہے۔ رات کو نیند کا نہ آنا کتنا بڑی مصیبت ہے اِس کا اندازہ وہ انسان لگا ہی نہیں سکتا کہ جو اِس مسئلے سے دوچار نہ ہوا ہو۔ خاص طور پر اگر یہ تکلیف بچوں میں ہو تو اُن کی صحت، تعلیم اور مستقبل کی زندگی بہت متاثر ہوتی ہے۔ ایسے بچے سونے میں بہت زیادہ وقت لیتے ہیں۔ سارے دن کے تھکے ہارے ہی کیوں نہ ہوں مگر اُن کا ذہن بہت ایکٹو ہوتا ہے جو اُن کو دیر تک خیالات، تصورات یا کسی کام پر اُکسائے رکھتا ہے۔ کئی بچے تو تقریباً رات بھر جاگتے رہنے پر مجبور ہوتے ہیں۔ عام طور پر وہ خیالی دنیا میں رہتے ہیں یا پھر کھیل کود میں خود کو مصروف رکھتے ہیں۔ جو تھوڑی بہت نیند رات گئے آتی بھی ہے تو وہ کچی نیند ہوتی ہے جس میں مسلسل بے آرامی اور بار بار جاگنے کا ماحول ہوتا ہے۔ اگر صبح چار بجے تک جاگتے رہیں یا 4 بجے کے قریب آنکھ کُھل جائے تو انہیں پھر دوبارہ نیند نہیں آتی۔ نیند میں جسم کے کسی حصہ میں حرکت کا سلسلہ جاری رہتا ہے مثلاً پاوں یا ہاتھوں [...]

7 09, 2017

سوال نامہ ہومیوپیتھک کیس ٹیکنگ حاد امراض

By |2018-02-07T00:20:24+05:00September 7, 2017|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|0 Comments

شکایات کا ظہور فوری ہوا یا بتدریج؟ تکلیف کا سبب؟ کیوں اور کیسے؟ درد کا مقام؟ دردوں کی نوعیت؟ ٹیسیں، میٹھا درد، دھڑکن دار؟ جلن دار؟ ایک ہی مقام پر یا اپنی جگہ سے پھیلتا ہے؟ دردوں میں کمی یا زیادتی کا سبب۔ مثلاً گرمی، سردی، گرم ٹھنڈی ہوا، ہوا کا جھونکا،نہانا دھونا،لیٹنے اٹھنے بیٹھنے کی پوزیشن،روشنی، اندھیرا، شورشرابا، خاموشی، مریض کے چہرے کے تاثرات؟ دکھ، غم، غصہ، بے چینی، گھبراہٹ، تشویش وغیرہ؟ کیا مریض کیس کو بڑھا چڑھا کر پیش کر رہا ہے؟ دورانِ تکلیف جسم کے کسی اور حصے میں کچھ ہو رہا ہوں۔ مثلاً درد کے ساتھ متلی، منہ سے رالیں، ڈکاریں وغیرہ۔ درد کے ساتھ پیشاب کا بار بار آنا اخراج: جسم کے کسی بھی حصہ سے جاری ہونے والے اخراج کی نوعیت، مثلاً گاڑھا، پتلا، خراشدار، بدبودار، رنگت، جلن وغیرہ دماغی علامات: آیا تکلیف کے سبب مریض کی ذہنی کیفیت یا علامات میں کوئی تبدیلی قابلِ غور ہے؟ مریض میرا، میری یا مجھے کا صیغہ استعمال کر رہا ہے؟ دورانِ تکلیف مریض کی پیاس کا کیا عالم ہے؟ اگر بخار ہے تو بخار کے متعلقہ علامات نوٹ کریں، مثلاً سردی، گرمی، پسینہ، پیاس، بے چینی، ڈر خوف، لاپرواہی، بخار کی شدت میں کمی زیادتی وغیرہ۔ [...]

6 09, 2017

A Followup / Feedback from an ONLINE Client with Skin Allergy, Fungus, Fear and Phobia of closed places – Remarkable Improvement by the Grace of Allah!

By |2017-09-08T08:34:30+05:00September 6, 2017|Categories: SOLVED CASES, Testimonials|Tags: |0 Comments

May you be healthy ever! 1. Previously i had neck muscles strain with stiffness and pain .... issue cured 2. Eyes had been swelled in the morning .... this cured too 3. Backache sometimes 4. Some times I have itching on left foot although allergy is cured (recent pic attached) 5. Fungal nail (pic attached) 6. Sometimes there is a severe fit of furry for some time. 7. Feels suffocating soon in closed and congested places but feeling better than previous week Thanks & regards

5 09, 2017

شدید بے عزتی کے احساس کی وجہ سے مسائل اور اُن کا ہومیوپیتھک علاج

By |2019-04-14T13:28:38+05:00September 5, 2017|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|0 Comments

اگر کسی شخص کی بھرے مجمع میں اتنی بے عزتی ہو جائے کہ وہ سر اٹھانے اور منہ دکھانے کے قابل نہ رہے۔ مثلاً کوئی سٹیج پر تقریر کر رہا ہو اور اُسے معلوم ہو کہ پتلون کی زِپ کھلی رہ گئی تو ایسی خفت یا ایسا احساسِ ندامت اس ضمن میں آئے گا۔ یا استاد کا تھپڑ لگنے پر کسی سٹوڈنٹ کا کلاس کے سامنے پیشاب یا پاخانہ خطا ہو جائے؛ یا کسی لڑکی کے ساتھ بھری مارکیٹ میں اوباش لڑکے بدتمیزی کر جائیں؛ یا گاؤں کا چوہدری کسی غریب خاتون کو گلی میں گھسیٹتا پھرے اور بے آبرو کردے؛ یا کسی شریف آدمی کو تھانے لے جا کر بے گناہ اس کی چھترول کرائی جائے۔ لہٰذا اس علامت پر جو ہومیوپیتھک دوائیں اہمیت کی حامل ہیں ان میں Colocythis; Ignatia Amara; Natrum Muriaticum; Lycopodium Clavatum; Staphysagria شامل ہیں۔ اگر اس قسم کے المیے سے گزرنے پر جلد پر زردی چھا جائے یا جگر متاثر ہو جائے تو لائیکوپوڈیم (Lycopodium Clavatum) ہی واحد دوا ہو گی۔ اور اگر مزاج میں عجیب سی بے حسی چھا جائے یا چُپ سی لگ جائے، اداسی چھا جائے یا مریض اول فول باتیں کرنا شروع کر دے، اسہال لگ جائیں یا ہسٹیریا کے [...]