Blog2021-01-28T00:08:44+05:00

Facebook Review – Hussain Ahmad about Hussain Kaisrani Homeopathy Treatment

I am 27 years old. It was 10 years ago when I had the first sign that something seriously wrong with my health. I started complaining anorexia. I turned into an introvert. I stopped any kind of interaction with my friends and family. All this made me sick enough that i started consulting well known doctors. And started taking top medicines in high amount that were a risk to my life. But only what i obtained were the cons. I had been sick so long i couldn't remember what it felt like to be healthy. Finally Allah bestowed his blessing on me and i got a chance to meet Dr Hussain Kaisrani. A great person and well experienced psychotherapist and homeopathic consultant. He is very compassionate, knowledgeable, empathetic and most respectful person. Wherever the art of medicine is loved there is also a love of humanity. He listened to me attentively and by his medicine and efforts i literally got cured and got a new life. I really want to thank him that he made me regain my life after a long time of desperation. I highly recommend those who are confronting any kind of mental disorders or other health issues to consult Doctor Hussain Kaisrani and throw away all the stress from their lives. Jazakillah again to Dr Hussain Kaisrani one of the best psychotherapists and homeopathic consultants in the world. -------------- ---- Hussain Kaisrani - Psychotherapist & Homeopathic Consultant - Lahore Pakistan. Phone 03002000210. ----

By |April 11, 2021|Categories: Digestive System, Mental Health, Testimonials|0 Comments

شیزوفرینیا: ذہنی صحت کے مریض کو تعویز نہیں علاج کی ضرورت ہے – ثنا بتول

’میں چیخ رہی تھی، یہاں سے جاؤ، اور میں نے دروازہ بھی بند کر دیا تھا، مجھے لگ رہا تھا کوئی مجھے اور میرے گھر والوں کو مارنا چاہتا ہے، تب ابو نے ماموں کو بلایا، ماموں آئے اور انھوں نے میرے ہاتھ رسی سے باندھ دیے۔ مجھے سیڑھیوں سے بُری طرح سے اتارا اور ایمبولینس میں ڈال کر ہسپتال لے گئے، وہ میرا پہلا اٹیک (دورہ پڑنا) تھا۔‘ عینی کی عمر اس وقت 16 برس تھی جس وقت انھیں پہلی بار شیزوفرینیا کا اٹیک ہوا۔ شیزوفرینیا ایک ذہنی مرض ہے جس سے انسانی سوچ، احساسات اور برتاؤ متاثر ہوتے ہیں۔ عینی نے بتایا کہ ’اس وقت گھر والوں کو فوری طور پر سمجھ نہیں آیا کہ مجھے کیا ہوا ہے، بعد میں جب ذکر ہوا تو یہ بات کہی گئی کہ چونکہ میں مغرب کے وقت گھر سے باہر گئی تھی اور ماہواری کے دنوں میں تھی تو مجھ پر ’جن کا سایہ‘ چڑھ گیا ہے۔‘ ذہنی امراض کے ماہرین کا کہنا ہے کہ دیگر امراض کی طرح شیزوفرینیا کا علاج بھی ادویات اور تھیراپی سے کیا جاسکتا ہے۔ طویل مدتی بیماری ہونے کے باوجود اس سے متاثرہ افراد خوشحال زندگی گزار سکتے ہیں۔ مگر عینی کا کہنا ہے کہ ان کی والدہ نے ان کا روحانی علاج شروع کروایا تھا۔ وہ بتاتی ہیں کہ ’جس دن میں ہسپتال میں زیر علاج تھی، اسی دن انھوں نے مولوی صاحب کو بلایا جنھوں نے تعویز بنا کر دیا اور کہا کے یہ ہمیشہ اپنے گلے میں ڈال کے رکھنا۔‘ عینی [...]

By |March 28, 2021|Categories: Mental Health|0 Comments

پیشاب کی نالی میں پتھری – کامیاب کیس، دوا، علاج – ڈاکٹر اعجاز علی راولپنڈی

نومبر 2020شام سات بجے کا عمل چل رہا تھا۔ میں ابھی کلینک کی نشست پر بیٹھا ہی تھا کہ فون کی گھنٹی بجی۔ فون اٹھانے پر آواز آئی کہ ڈاکٹر صاحب! میں مسجد نماز کیلئے گیا۔ استنجا کیا تو مجھے پیشا ب کی نالی میں کچھ تکلیف محسوس ہوئی۔ ایسا نہ ہو کہ رات کو یہ تکلیف بہت زیادہ  کہیں بڑھ جائے۔ کیا میں ابھی ابھی آپ کے پاس آ جاؤں؟ میں نے اسے کہا آ جائیں کیوں کہ  دوا   مجھے اس کی گفتگو سے ہی سمجھ آ گئی تھی۔ اگلے چند منٹ کے اندر  یہ صاحب بھاگتے دوڑتے کلینک آ پہنچے۔ چھوٹتے ہی بولے۔ مجھے ابھی پیشاب کی نالی میں تکلیف محسوس ہوئی۔ میں بغیر کسی تاخیر کے فوراً آپ کے پاس دوڑا آیا ہوں۔ مجھے خوف ہے کہ کہیں یہ رات کو زیادہ بڑھ نہ جائے اور مجھے ہسپتال میں داخل نہ ہونا پڑ  جائے۔ ہسپتال میں جانا پڑ گیا تو بغیر سرجری آپریشن کوئی علاج ممکن ہی نہیں ہے۔ مریض نے اپنی اس کیفیت کو بڑے وزن کے ساتھ دو تین بار دہرایا۔ مجھے اگرچہ اس کے روبرک اور دوا فون پر ہی سمجھ آ گئی تھی لیکن پھر بھی  اسے اپنے ایک اور مہربا ن ڈاکٹرمحمد عثمان علی صاحب سے  ڈسکس کر لیا۔ انہوں نے بھی یہی روبرک اور دوا نکالی۔ اس دوا کی دو سو طاقت کی ایک خوراک اسی وقت مریض کو  کھلا دی گئی۔۔۔۔۔۔ پلاسبو کا لفافہ بھر کر مریض کو رخصت کر دیا گیا ۔۔۔۔ قارئین کرام! اللہ کا کرم  ہی ہو [...]

By |February 20, 2021|Categories: Homeopathic Doctor Ijaz Ali, Homeopathy in Urdu, SOLVED CASES|0 Comments

گندم الرجی دودھ گلوٹن الرجی سیلیک ڈیزیز – کامیاب علاج – گوگل ریویو

۔2018 میں عید پر دوستوں کے ساتھ کھانے کے دوران معدے میں تکلیف شروع ہوئی۔ اینڈوسکوپی کے بعد ڈاکٹروں نے ایچ پائیلوری کا مسئلہ بتایا۔ مسائل بہت بڑھے تو ڈاکٹرز نے گندم الرجی (wheat  gluten  allergy) بتائی اور گندم سے روک دیا۔ بہت علاج کروایا فارن ڈاکٹرز سے بھی رابطہ کیا لیکن کسی کے پاس کوئی حل نہیں تھا۔ زندگی بوجھ بن گئی۔ میں گندم نہیں کھا سکتا تھا۔ بسکٹ بیکری کی باقی چیزیں سب بند تھیں۔ شائد پڑھنے یا سننے میں یہ بات اتنی عجیب نہ لگتی ہو لیکن اس طرح زندگی گزارنا بہت اذیت دیتا تھا۔ مکئی کی روٹی کھاتا تھا یا پھر ابلے چاول۔ اتنے پرہیز کے باوجود میں ٹھیک نہیں تھا۔ معدے میں درد رہتا۔گیس ٹربل ہر وقت ہوتی اور معدہ سوج جاتا تھا۔ ڈکار آنے لگتے پیچش لگ جاتے۔ پیٹ میں ہر وقت گڑگڑ طوفان رہتا تھا۔ کھانا کھاتے ہی پسینے آنے لگتے۔ سر اور چہرہ پسینہ پسینہ ہو جاتا تھا۔ پیٹ اور بازوؤں کے نیچے بہت پسینہ آتا تھا۔ بدبودار پاخانے آنے لگتے اور اس کے بعد شدید کمزوری۔ مجھ سے اٹھا ہی نہیں جاتا تھا۔ پاخانہ کر کے اٹھتا تو چکر آ جاتا تھا۔ دودھ الرجی بھی تھی۔ میں سب کچھ چھوڑ دیا مگر میرا پیٹ ذرا بھی بہتر نہیں ہوا۔ گندم گلوٹن الرجی نے میری زندگی تباہ کر دی تھی۔ نماز پڑھنے مسجد نہیں جاتا تھا۔ وہاں سانس پھولنے لگتی پسینے آتے اور میں بے ہوش ہو جاتا۔ میں گھر پر بھی نماز نہیں پڑھ پاتا تھا۔ مجھے عجیب وغریب خیالات واہمے [...]

By |February 13, 2021|Categories: Digestive System, Homeopathic Awareness, Mental Health, Testimonials|0 Comments

From Anxiety, Panic Attacks to happy, healthy normal life – Feedback

AOA dr sb. hope u r fine. Finally I came after wandering 4 hours. We had lunch at our fav place, shared tons of gossips then headed to the market. I bought lots of things while nothing was planned but still bought enough stuff. It rained while we were in between our shopping but we kept on moving n at the end we encountered a procession that was on its way through bazar then we walked much to get some conveyance. Gossip, food, walk in rain everything just made me happy. Moral of the story I enjoyed a lot after a loooooooooong time feeling happiness deep inside. Even I tried imli n aalu bukhara sharbat first time in my life cz I always afraid f having such things that can affect my throat. Thanks for making this happen for me yes ALHAMD O LILLAH, ALLAH has blessed me with such wonderful people n blessings around n now I would make best out of all these IA. ----------------- Hussain Kaisrani - Psychotherapist & Homeopathic Consultant - Lahore Pakistan. Phone 03002000210  

By |February 4, 2021|Categories: Mental Health, Testimonials|0 Comments

لکنت ہکلاہٹ اعتماد کی کمی شدید غصہ ڈر خوف فوبیا – کامیاب علاج – فیڈبیک

میرا ایک ہی بیٹا ہے- اب عمر اس کی چھ سال ہے۔ میری دنیا اسی کے گرد گھومتی ہے۔ وہ شروع سے ہی حساس تھا۔ میں اسکا بہت خیال رکھتی لیکن پھر بھی اس کو ٹھنڈ  لگ جاتی۔ سردی کا موسم  ڈاکٹروں کے کلینک پر گزرتا۔ گرمی آتے ہی ہیضے کی شکائت ہونے لگتی۔ کبھی الٹیاں کبھی لوز موشن اس کو کچھ نہ کچھ ہوا رہتا تھا اور میں دوائیں دیتی رہتی تھی۔ مسلسل اینٹی بائیوٹک کھانے سے دوائیں اس پر اثر ہی نہیں کرتی تھیں۔ بہت کمزور ہو گیا تھا۔ شدید ضد کرتا تھا۔ چیزیں توڑتا تھا۔ غصے میں وحشیوں کی طرح ہو جایا کرتا۔ اسے اپنے آپ پر کنٹرول نہیں رہتا تھا۔ مجھے بری طرح مارتا تھا۔ میرے کپڑے پھاڑ دیتا تھا۔ جب وہ ضد کرتا تو کسی بھی طرح نہیں مانتا تھا۔ دماغ کسی بات پر اٹک جاتا تو وہ مسلسل اسی کے بارے میں سوچتا۔ دوسری طرف شدید ڈرپوک اور بزدل تھا۔ اکیلے باہر نہیں جاتا تھا۔ ہر وقت میرے ساتھ چپکا رہتا تھا۔ کسی سے بات نہیں کرتا تھا۔ میں نے اپنے بھائی کی شادی کا سارا فنکشن اس کو گود میں اٹھا کر اٹینڈ کیا کیونکہ وہ کسی کے پاس نہیں جاتا تھا۔ اس میں کسی کا سامنا کرنے کی ہمت نہیں ہوتی تھی۔ گھر میں مہمان آ جاتے تو وہ میرے پیچھے چھپ جاتا یا پھر بیڈ کے نیچے گھس جاتا تھا۔ پڑھنے کی طرف رحجان نہیں تھا۔ کچھ یاد نہیں کر سکتا تھا۔ بولنا جاری ہوا تو اس کی زبان بھی ہکلانے [...]

مثانہ بلیڈر – درد پتھری خون جلن- علاج

مثانہ بلیڈر  ۔ BLADDER پیشاب گردوں سے صاف ہو کر مثانہ میں آ کر جمع ہوتا ہے اور پیشاب کی نالی کے ذریعہ خارج ہوتا ہے۔ ہے گردوں سے مثانہ میں دو نالیوں سے گزر کر آتا ہے۔ یہ نالیاں دونوں گردوں سے مثانہ میں آ کر کھلتی ہیں۔ میڈیکل کی زبان میں ان نالیوں کو یوریٹرز () کہا جاتا ہے۔ پیشاب جہاں سے نکلتا ہے؛ اسے یورتھرا () کہتے ہیں۔ عام طور پر مثانہ کے دو اہم امراض ہیں: مثانہ کی گرمی مثانہ میں پتھری   مثانہ کے ورم گرمی کی علامات:۔ درد اور پیشاب کا تھوڑا تھوڑا اور جل کر آنا پیشاب کھل کر بھی آئے تو درد اور جلن ساتھ ہوتا ہے مثانہ کا ورم اگر زخم کی صورت اختیار کر جائے تو پیشاب کے ساتھ خون اور پیپ بھی آ سکتی ہے۔ ان علامات کی اول درجہ کی دوا کنتھیرس   ۳۰ (ایک سے چار خورا ک روزانہ ) ہے۔   مثانہ کی پتھری خارج کرنے کے لئے سارسپر لا ۳۰(دن میں تین چار مرتبہ ) بڑی مفید ثابت ہوئی ہے۔ بشرطیکہ اتنی بڑی نہ ہو جو پیشاب کی نالی سے نکل نہ سکے ۔اگر سائز بڑا ہو تو  اس کا علاج اپریشن سے نکالنا ہے۔ درد: میگ فاس ۳۰   (دن میں تین چار دفعہ )۔ فالج :  کاسٹیکم ۳۰  (دن میں تین چار دفعہ )۔ رسولی:  تھوجا   ۳۰ (ایک خوراک روزانہ یا دقفہ سے)۔   خون یا پیپ کا درد کے ساتھ خارج ہونا سوزاک کی بھی علامت ہے۔ سوزاک کیا ہوتا ہے اور مسائل و [...]

By |January 20, 2021|Categories: Digestive System, Homeopathy in Urdu, Mental Health|0 Comments

میں، ڈپریشن اور ڈاکٹر حسین قیصرانی صاحب۔ فیڈبیک

آج سے ٹھیک ایک سال پہلے میں نے ڈاکٹر حسین قیصرانی صاحب سے علاج کے سلسلے میں رابطہ کیا۔ اس ایک سال کے عرصے میں، میں ڈاکٹر صاحب سے کس قدر استفادہ کر سکی اس کے لئے ضروری ہے کہ پہلے میرے ماضی کی ایک جھلک دکھائی جائے۔ میرا شمار ان لوگوں میں ہوتا ہے جن کے لئے زندگی صرف آسانیوں اور آسائشوں کا نام ہے۔ ایک مڈل کلاس فیملی سے تعلق رکھنے کے باوجود میں نے اپنی زندگی میں کوئی بھی کمی اور محرومی نہیں دیکھی۔ میں اپنے والدین، بہن بھائی غرض کہ اپنے خاندان میں سب کی لاڈلی تھی۔ میرے والد میری ہر خواہش اپنا فرض سمجھ کر پوری کرتے تھے۔ اس محبت کے علاوہ اللہ نے مجھے ہر قدم پر کامیابی سے بھی نوازا۔ سکول ہو یا کالج میں نے ہر جگہ اپنی کامیابی کی تاریخ رقم کی۔ میری فیملی میں مجھے رول ماڈل سمجھا جاتا تھا۔ میری تمام کزنز میری خوش قسمتی کی مثالیں دیتی تھیں۔ فیملی کی سپورٹ اور اللہ کی نوازش نے میری ذات کو بہت مضبوط اور نڈر بنا دیا تھا۔ میں بڑی سے بڑی پریشانی کا بھی بہت بہادری سے سامنا کرنے کا ہنر رکھتی تھی اور اپنی وقت پر صحیح فیصلہ کرنے اور پھر اس پر ڈٹے رہنے کی خوبی کی وجہ سے جانی جاتی تھی۔ میں بلا خوف و خطر کامیابیاں اور خوشیاں سمیٹتی ہوئی زندی کے سفر پر گامزن تھی جب اچانک میں ایک اندھیری دیوار سے ٹکرا گئی۔ میرے والد صاحب اچانک اس دنیا سے رخصت ہو گئے۔ [...]

معدہ خرابی، پینک اٹیک، ہارٹ اٹیک، موت کا خوف وہم وسوسے – گوگل ریویو، فیڈبیک

میں اٹک سے ہوں مگر پچھلے کچھ سال سے ہانگ کانگ کے چم شا چوئی شہر میں ہوں۔ ڈاکٹر حسین قیصرانی کا نمبر مجھے میرے ایک دوست نے یہ کہہ کر دیا کہ یہ ٹاپ کے ہومیوپیتھک ڈاکٹر ہیں۔ میں کچھ وہمی طبیعت کا مالک تھا اس لئے میں نے کال نہیں کی میں پہلے ہی اپنی صحت کی وجہ سے پریشان تھا اس لئے تجربے نہیں کر سکتا تھا۔ اپنی تسلی کے لیے میں نے گوگل، فیس بیک ویب سائٹ   kaisrani.com   پہ کیس اور لوگوں کے ریویوز پڑھنے پر کافی وقت لگایا۔ اس کے بعد ڈاکٹر قیصرانی سے رابطہ کیا۔ ان کے خلوص بھرے انداز نے مجھے بہت متاثر کیا۔ میں نے علاج کروانے کا فیصلہ اُسی وقت کر لیا۔ میرا سب سے بڑا مسئلہ اینگزائٹی تھا مجھے شدید پینک اٹیک آتے تھے مجھے لگتا تھا کچھ ہونے والا ہے میں ابھی ابھی مرنے والا ہوں میرا دل بند ہونے والا ہے میری آنکھوں کے آگے اندھیرا چھا جاتا تھا۔ پینک اٹیک شروع ہوتے ہی میں جسم ٹھنڈا ہو جاتا سردی سے کانپنے لگتا تھا بھلے گرمی غضب کی ہو۔ پھر بخار بھی ہو جاتا۔ مجھ کو اپنے مرنے کا اتنا پکا یقین ہو جاتا تھا کہ میں گھر والوں کو اپنے پاسورڈ وغیرہ بتا دیتا اور لیٹ کر کلمہ پڑھتا رہتا تھا۔ ہسپتال جاتا تو ڈاکٹر ہمیشہ یہی کہتے کہ کچھ بھی نہیں ہے آپ کو سٹریس نہ لیا کرو سائکارٹرسٹ کی دی ہوئی گولیاں کھاتا تھا ہر وقت ٹینشن میں رہتا تھا ذہن الجھا رہتا تھا۔ کوئی [...]

ذہنی اور نفسیاتی مسائل میں ہومیوپیتھک علاج کے اثرات – ایک مریض کے تاثرات – حسین قیصرانی

سر جی ایک بات کروں اگر اجازت دیں۔ اگر خود کشی حرام نہ ہوتی تو مَیں اب تک خود کو گولی مار لیتا ... جو وقت مجھ پر گزرا ہے مجھے پتہ ہے ..... مگر آپ نے مجھے ایک ہمت دی ہے اس پر میں آپ کو سلام کرتا ھوں ... ورنہ میری زندگی خراب تھی ہر ایک دن ڈاکٹر کے پاس جانا اور ڈر کے ساتھ رہنا .... نہ رات کو سکوں نہ دن کو ... اب کم سے کم یہ ڈر نہیں رہا .... درد ویسے ہی ہیں مگر دماغ میں ڈر نہیں ... اب کوشش کریں کہ جو جسم میں مسئلہ ہے وہ حل ھو .... مسئلہ یہ ہے ... کہ اندر گرمی اور گیس ہے یہ آپ نے حل کرنا ہے۔ اس سے ہی سارا مسئلہ ہے جو میں سمجھتا ھوں اَور کچھ نہیں مجھے ... یہ میرا خیال ہے ... مگر آپ بہتر جانتے ہیں ...     اور سر جی ایک بات مَیں مریض تھا جو کہ اَب نہیں ہوں۔ اب مَیں خود کو بہتر سمجھتا ھوں ... مگر اُس وقت کی جو عادت ہے وہ جاتے جاتے وقت لگے گا ... شاید جو پہلے مجھے مسئلے تھے اور میں بھاگ کے ڈاکٹر کے پاس چلا جاتا تھا جلدی جلدی اور ہر وقت سر پر یہ ہوتا تھا اب کچھ ہو نہ جائے ... یہ عادت بن گی تھی ... مگر اللہ پاک کا شکر ادا کرتا ہوں کہ آپ ایک فرشتہ بن کے آئے ہو میرے لیے اور مَیں، کم سے کم، ویسا [...]

گندم گلوٹن الرجی، دودھ، فوڈ الرجی، پیٹ معدہ خرابی- کامیاب علاج – فیڈبیک

میں کئی سالوں سے گلوٹن گندم الرجی اور دودھ الرجی لیکٹوز انٹالرنس کا شکار تھا اور اس کے علاج کے لیے دھکے کھا رہا تھا۔ ہفتے میں پانچ دن بیمار رہتا اور دو دن کچھ ٹھیک۔ میری صحت میرے لیے اتنا بڑا مسئلہ بن گئی تھی کہ مجھے جاب بھی چھوڑنی پڑی۔ میں کچھ کھاتا تو ہضم نہ ہوتا تھا۔ روٹی کھاتے ہی پیٹ سخت خراب ہو جاتا، چکر آنے لگتے، سر درد کرتا اور پیٹ گیس سے بھر جاتا تھا۔ میں بہت کمزور ہو گیا تھا۔ دودھ یا دودھ سے بنی کوئی چیز نہیں کھا سکتا تھا۔ جو کی روٹی کھاتا تھا اور قہوہ پیتا تھا۔ ملنا جلنا چھوڑ دیا۔ کسی کام میں دل نہیں لگتا تھا۔ حکیم کہتے تھے معدے کا مسئلہ ہے۔ ڈاکٹر کہتے تھے آنتوں میں سوزش ہے، گندم دودھ الرجی ہے۔ سائکاٹرسٹ کہتے تھے کہ اینگزائٹی ڈپریشن ہے۔ نیوٹریشن سے فوڈ ڈائیٹ پلان لئے۔ ہومیوپیتھک ڈاکٹر کی دوائی کھائی۔ سب سےعلاج کروایا لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ میرے دماغ پر دھند سی  چھائی رہتی تھی۔ کنفیوژن سے کسی کام پر توجہ نہیں تھی۔ رات کو نیند نہیں آتی تھی۔ بہت ڈر لگتا تھا۔ دل دماغ ہر وقت وہم خوف وسوسوں منفی سوچوں میں الجھا رہتا تھا۔ میں سونے کے لیے مختلف حربے ٹوٹکے استعمال کرتا تھا لیکن کوئی فائدہ نہ ہوتا تھا۔ لگتا تھا کہ مجھے کوئی بہت بڑی بیماری لگ گئی ہے اور میں بس مرنے والا ہوں۔ ہر وقت انٹرنیٹ گوگل پر اپنی بیماریوں کا علاج ڈھونڈتا رہتا تھا۔ ایک دن ڈاکٹر حسین [...]

گندم گلوٹن اور دودھ الرجی – کامیاب کیس دوائیں علاج – حسین قیصرانی

چوبیس سالہ نوجوان مسٹر چوہدری نےانٹرنیٹ پہ کامیاب گلوٹن الرجی کیس پڑھنے کے بعد  گوجرانوالہ سے کال کی۔ وہ پچھلے تین سال سے شدید قسم کی فوڈ الرجی (celiac disease)  کا شکار تھے۔ گندم اور دودھ سے شدید الرجی (Gluten  allergy) تھی جس کی وجہ سے خوراک کے بے پناہ مسائل تھے۔ حساس طبیعت، معدے کے مستقل مسائل،  پیٹ کی مسلسل خرابی، جادو ٹونے کا خوف، محبت  میں  ناکامی،  شدید ذہنی دباؤ  (extreme mental stress) اور پھر سب سے بڑھ کر گندم گلوٹن الرجی اور دودھ الرجی نے ان کی صحت کو تباہ کر کے رکھ دیا تھا۔ تفصیلی کیس ڈسکشن کے بعد درج ذیل  صورت حال سامنے آئی۔ 1۔ گندم (wheat   allergy) اور دودھ سے شدید الرجی (milk   allergy) تھی۔  گندم اور دودھ سے بنی ہوئی کوئی بھی چیز کھاتے ہی طبیعت شدید خراب ہو جاتی تھی۔  کھانا ہضم نہیں (poor  digestive  system) ہوتا تھا۔  پیٹ خراب ہو جاتا تھا۔ بدبودار  پاخانے  (smelly,  sticky  stool) آنے لگتے تھے۔ جو کی روٹی کھاتے تھے اور قہوہ وغیرہ پیتے تھے۔ 2۔ معدہ شدید خراب (stomach  Disorder) رہتا تھا۔ بھوک (appetite) نہیں لگتی تھی۔ کچھ کھاتے ہی پیٹ میں گیس (Gastric  issue) بھر جاتی تھی۔ پیٹ غبارے کی طرح محسوس ہوتا تھا۔ سر میں درد ہونے لگتا تھا۔ چکر آتے تھے۔ عجیب سے غبار کا احساس ہوتا تھا۔ کچھ بھی کھانے کے بعد کافی دیر چہل قدمی کرنی پڑتی تھی تاکہ کھانا کچھ ہضم ہو سکے۔ 3۔ وزن تیزی سے کم (weight loss) ہو رہا تھا۔ نقاہت (fatigue) کا احساس بہت [...]

امتحان کا ڈر خوف فوبیا – کامیاب کیس دوا علاج – حسین قیصرانی

25 سالہ مس AA ،پاکستان کی رہائشی، یونیورسٹی اسٹوڈنٹ نے وٹس ایپ پر رابطہ کیا۔ وہ اپنے امتحان کے لیے بہت پریشان تھی اور پڑھائی پر بالکل بھی توجہ نہیں دے پا رہی تھی۔ امتحان کا سوچ کر ہی انزائٹی (Anxiety) ہونے لگتی تھی۔ ناکامی کا خوف (Fear  of  Failure) اعصاب پر سوار تھا۔ اپنی پڑھائی کے ساتھ ساتھ والدین کی صحت کی فکر بھی اندر ہی اندر کھائے جا رہی تھی۔ ان تمام معاملات کے علاوہ بہت سے جسمانی، نفسیاتی اور جذباتی مسائل بھی درپیش تھے۔ مثلاً بھوک نہیں لگتی تھی۔ ہر وقت وہم ستاتے تھے۔ خود پر اعتماد بالکل نہیں تھا۔ ان جانے اور بے شمار ڈر، خوف اور فوبیاز (Fear  and  Phobia) تنگ کرتے تھے۔ کسی پل بھی ذہن کو سکون نہیں تھا۔ مس AA (Nausea  and Vomiting) کو بچپن سے ہی امتحان کی ٹینشن (Examination  phobia    /    Fear    of     Phobia) کا سامنا تھا۔ پچھلے سمسٹر میں وہ بہت پریشان رہی۔ جب امتحان میں لمبے سوالات دیکھتے ہی اسے قے الٹی آنے لگی۔ پیٹ میں چکر چلنے لگے۔ دل گھبرانے لگا۔ اس لیے اب وہ اس کا علاج چاہتی تھی تاکہ اگلا امتحان اچھا ہو جائے۔ اب صرف تین دن بعد اس کے سمسٹر کا فائنل امتحان تھا اور وہ شدید امتحانی دباؤ (Exam Stress) کا شکار تھی۔ امتحان کے بارے میں مسلسل سوچتی تھی اور اس پر اسے کنٹرول نہ تھا وہ پڑھائی پر بالکل توجہ نہیں دے پا رہی تھی۔ تاہم ہومیوپیتھی طریقہ علاج میں کیس کی مکمل تفاصیل لی جاتی [...]

By |January 5, 2021|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES|0 Comments

انگزائٹی، ڈپریشن، معدے اور پیشاب کے مسائل – کامیاب کیس، دوا اور علاج -حسین قیصرانی

مسٹر ایچ کا تعلق اسلام آباد سے ہے۔ وہ ایک سافٹ ویئر انجینئر ہیں۔ ان کے عجیب و غریب مسائل نے ان کے معیار زندگی کو خاصہ متاثر کر رکھا تھا۔ گھر سے نکلتے ہی پیشاب اور پاخانے کی حاجت کا بار بار محسوس ہونا اور ان پر کنٹرول کھو دینے کے خوف نے زندگی کو محدود کر دیا تھا۔ دنیا گھومنے کا شوق تھا لیکن سفر کے دوران ہونے والی انزائٹی (Anxiety) کی وجہ سے یہ ممکن نہ تھا۔ لوگوں سے میل جول نہ ہونے کے برابر تھا۔ رش والی جگہ پر دم گھٹنے لگتا تھا۔ اسے لگتا تھا وہ وہاں پھنس جائے گا اور نکل نہیں پائے گا۔ معدے کے مسائل، آنکھوں میں سوجن، بے سکون نیند، ہر وقت ڈپریشن، ذہنی دباؤ، پٹھوں کی شدید کمزوری، خود اعتمادی کا فقدان، وہم، ڈر، خوف، پریشانی اور گھبراہٹ نے شخصیت کو مسخ کر رکھا تھا۔ تفصیلی گفتگو کے بعد جو مسائل سامنے آئے ان کا خلاصہ یہ ہے۔ ۔🔷 جسمانی مسائل🔷۔ سفر کے دوران بلکہ سفر کا پروگرام بنتے ہی شدید ٹینشن ہوتی تھی۔ ذہن ہر وقت اس معاملے پر سوچنے پر مجبور ہی ہوتا۔ بار بار پیشاب کی حاجت ہوتی (strong   urge   for    urination) اور ایسا لگتا جیسے لوز موشن () کی شکایت ہوجائے گی۔ (frequent   bowel   movement) پیٹ میں عجیب سے چکر چلنے لگتے تھے۔ (growling) اپنے قریب واش روم نہ پا کر ڈر لگنے لگتا۔ پیشاب نکل جانے کے خوف سے شدید اعصابی تناؤ پیدا ہوتا تھا۔ مریض کو لگتا تھا یہاں ابھی اس کا پیٹ خراب ہو جائے گا اور [...]

By |January 3, 2021|Categories: Digestive System, Homeopathy in Urdu, Mental Health|0 Comments

آٹزم سپیکٹرم ڈس آرڈر کیا، کیوں، کیسے ۔ دوا علاج کے معاملات – حسین قیصرانی

آٹزم کیا ہے، کیوں ہوتا ہے اور علاج کی تفصیل - مکمل راہنمائی حسین قیصرانی سائیکوتھراپیسٹ & ہومیوپیتھک کنسلٹنٹ ENGLISH VERSION:(ASD) ۔ Autism Spectrum Disorder آٹزم ایک ایسا ذہنی عارضہ ہے جس میں مریض کو بات چیت، میل جول، سوچ سمجھ اور اپنے حواس کو کنٹرول کرنے میں مشکلات پیش آتی ہیں۔ آٹزم سے متاثرہ مریض کا دماغ  عام انسان کے مقابلے میں ایک مختلف طریقے پر نشوونما پاتا اور کام کرتا ہے۔ یہ دنیا کو مختلف انداز سے دیکھتے اور سمجھتے ہیں۔ آٹزم کا شکار ہر بچہ دوسرے سے مختلف ہوتا ہے اور اس کی علامات بھی دوسرے آٹزم بچوں سے مختلف ہوتی ہیں۔ یہ بچے یا تو ہر پل تبدیلی چاہتے ہیں یا پھر یکسانیت کو پسند کرتے ہیں اور نئے ماحول یا ہر صورتِ حال کے مطابق ڈھلنا ان کے لیے مشکل ہوتا ہے۔ دیر سے بولنا شروع کرتے ہیں اور اپنی بات سمجھا نہیں پاتے۔ عام طور پر یہ  بچے دوسروں سے نظریں نہیں (poor eye contact) ملاتے۔ ان کا نام پکارا جائے تو متوجہ نہیں ہوتے اگرچہ وہ  اپنا نام سن رہے ہوتے ہیں۔ یہ پسند نہیں کرتے کہ کوئی ان کے زیادہ قریب آئے اور ان کو چھوئے (don’t liked to be touch)۔ یہ اپنے جذ بات کا اظہار نہیں کر پاتے۔ ان کو کچھ کام بہت آسان لگتے ہیں اور کچھ انتہائی آسان کام بہت مشکل لگتے ہیں۔ عام طور پر ایسے بچے کھلونوں سے کھیلتے نہیں ہیں بس انھیں جمع کرتے ہیں اور ایک خاص ترتیب میں رکھتے ہیں اور اس ترتیب [...]

My review for Hussain Kaisrani – Psychotherapist and Homeopathic Consultant

Deal of selling house, shifting, getting another house first on rent and then on ownership basis during the next two years brought me under another bout of emotional stress. Ultimately, I was breaking up. Signs of physical distress in the form of shoulder pain emerged. Finally I was having complete frozen shoulder in June 2019. Pain in my shoulder used to be so immense that I couldn’t sleep for many nights. Again a rush to doctors started: physician, orthopedics etc. Everyone used different therapies including calcium, Vitamin D, Steroid injection. I was advised shoulder surgery. However, nothing appeared to be working.  In the meanwhile, I thought of my homeopathic doctor friend Mr. Hussain Kaisrani. I had known him for some years in connection with property advice but he also ran a homeopathy clinic. Upon shifting to Bahria Town Lahore, I also started running a fever which couldn’t be dislocated for months even upon consuming course after course of antibiotics. However, as I approached him, I recovered from that fever upon taking just 2-3 doses of his medicine. I approached him with this problem of mine and physiotherapy of my shoulder was also started. My frozen shoulder issue stands recovered upto 95% now.  Apart from that, the following changes in my personality have taken place: My general fear / negative anticipation of another calamity befalling upon by me by Champions of piety has largely been overcome. Hurried feeling with uncontrolled fast paced mind and strained veins especially in the head has [...]

By |December 16, 2020|Categories: Muscles, Ligaments, Tendons and Bones, Testimonials|0 Comments

خود اعتمادی قوت فیصلہ کمی، وسوسے، ڈر – کامیاب کیس، علاج دوا – حسین قیصرانی

27 سالہ مسز K نے حیدرآباد سے کال کی۔ محترمہ بہت پریشان تھیں اور شدید ڈپریشن (depression) کا شکار تھیں۔ ان کے لیے بات کرنا اور اپنی طبیعت کے بارے بتانا بھی مشکل تھا۔ ذہنی انتشار بہت شدت اختیار کر چکا تھا۔ شدید گھٹے ہوئے جذبات، شادی شدہ زندگی کی ناہمواری، بے پناہ ذہنی الجھاؤ، نیند کی کمی، بھوک، پیاس کی عدم موجودگی، احساس کمتری، غصہ، انگزائٹی اور بہت سے مسائل نے شخصیت کو بہت ڈسٹرب کر رکھا تھا۔ تفصیلی گفتگو سے درج ذیل صورت حال سامنے آئی۔ 1۔ مسز K   اپنے جذبات کا کبھی بھی اظہار (introvert) نہیں کر پاتی تھی۔ خوشی، غمی، محبت،  نفرت یا غصہ غرض ہر جذبہ دبا ہوا تھا۔ کسی سے بات کرنا بہت مشکل لگتا تھا۔ بات کرنے کی ہمت ہی نہیں ہوتی تھی۔ زیادہ تر خاموش رہتی تھی۔ شرمیلا پن ( extremely          shy) بہت زیادہ تھا۔ اگر کسی چیز کی ضرورت ہوتی تو اپنے گھر والوں سے بھی نہ کہتی تھی۔ 2۔ غصہ (anger) بہت شدید آتا تھا لیکن کبھی کسی پر غصہ نکالتی نہیں تھی۔ اندر ہی اندر گھٹتی رہتی تھی۔ شدید جھنجھلاہٹ ہونے لگتی تھی۔ انگزائٹی (Anxiety)  بہت بڑھ جاتی تھی۔دل کرتا  تھا کہ چیزیں توڑ دوں لیکن کبھی ایسا نہیں کر پاتی تھی۔ اور جب غصہ حد سے بڑھ جاتا تو رونے لگتی تھی۔ 3۔ ذہن (confuse     mind) الجھا رہتا تھا۔ یہ کروں یا نہ کروں ۔۔۔۔ بات کروں یا نہ کروں ۔۔۔ کوئی بھی فیصلہ (lack     of    decision     power) نہیں لے [...]

By |December 13, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES|0 Comments

خود اعتمادی، قوت فیصلہ کی کمی، ذہنی کشمکش، سوچیں، ڈر – کامیاب علاج – فیڈبیک

میرے لیے بات کرنا شروع سے ہی مشکل تھا۔ گھر میں سب کانفیڈنٹ تھے لیکن میرے اندر سیلف کانفیڈینس (Lack of Confidence) بالکل نہیں تھا۔ جھجھک ہر معاملے میں نمایاں تھی۔ مجھے لگتا تھا سب مجھ سے بہتر ہیں اور میں سب سے کمتر (Inferiority Complex) ہوں۔ میں خود کو پڑھائی یا کسی بھی ایکٹویٹی میں مصروف رکھتی تھی۔ سکول لائف میں ہی سلائی، کڑھائی، کوکنگ اور پینٹنگ سیکھی۔ شائد میں یہ سب اس لیے کرتی تھی کہ سب میری تعریف کریں۔ لیکن سب سے مشکل بات کرنا تھا۔ میں بھوک سے نڈھال ہو جاتی لیکن امی سے کھانا نہیں مانگ سکتی تھی۔ اگر کبھی کوئی کچھ پوچھ لیتا تو زبان لڑکھڑا جاتی تھی، ٹانگیں کانپنے لگتی تھیں اور میں کھڑی نہیں رہ پاتی تھی۔ میں اکیلی باہر نہیں جا سکتی تھی۔ لوگوں سے ڈر لگتا تھا۔ اگر کسی معاملے میں میری حق تلفی ہوتی تو میں خاموشی سے سہہ لیتی اور اپنے آپ کو ہی قصوروار سمجھنے لگتی تھی۔ ہر وقت رونا آتا رہتا تھا۔ بھوک پیاس نہیں لگتی تھی۔ جب کافی دیر گزر جاتی تو خود ہی پانی پی لیتی لیکن پیاس کا احساس نہیں ہوتا تھا۔ مجھے زندگی میں کوئی چارم نظر نہیں آتا تھا۔ میری والدہ تھوڑی ریزرو نیچر کی ہیں۔ عام ماؤں کی طرح بچوں کو پیار کرنا، گلے لگانا یہ سب وہ نہیں کرتی تھیں۔ وہ بہترین ماں تھیں مگر ان کی زیادہ توجہ ڈسپلن، پڑھائی اور صاف ستھرائی پر ہوتی تھی۔ میرا دل کرتا تھا کہ وہ مجھے پیار کریں، مجھے گلے [...]

By |December 12, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, Testimonials|0 Comments

Healing Crisis: The aggravation of Homeopathic treatment of Chronic disease

I routinely recommended to my patients right on their first visit to eat and drink whatever they desire for. When they came back two or three weeks later, they often said that they feel much better now but a week ago they had a cold. When I asked about the symptoms they turn out to be mainly a profuse mucus discharge, sometimes also diarrhea, but rarely are there signs of a real infection. In fact, these patients just experienced their first healing crisis on their long path to better health. This concept of a healing crisis clearly shows the opposite perceptions that drug medicine and homeopathic medicine have of health and the healing process. In regular or allopathic medicine it is assumed that a patient who is free of disease symptoms is more or less healthy and the aim of drugs is to achieve this condition by removing any disagreeable symptoms. Frequently alternative or complementary medicine is used in the same way, instead of more or less toxic drugs just more benign remedies are being used. This is what most patients want and according to their beliefs they either use drugs or natural remedies for this purpose. However, homeopathic treatment, following in the footsteps of the old nature cure movement, aims much higher. Here, health is regarded not just as a temporary absence of disease symptoms, but as a state of profound physical, emotional and mental well being so that we simply cannot develop or catch a disease. Animals living [...]

By |December 12, 2020|Categories: Professional|0 Comments

Autism Attention deficit hyperactivity disorder Frequently Asked Questions

Homeopathic Treatment of Autism, Attention deficit hyperactivity disorder ADHD, ASD: Frequently Asked Questions How long does it take to cure Autism? What is the treatment duration for autistic children? This is a very valid question and often among the first few questions that parents of autistic children ask. The honest answer is that Doctors do not know for sure. It is not only for Autism but also for all other chronic dieases like asthma, allergies,  psoriasis, arthritis, hypothyroidism, eczema etc). The treatment duration varies from individual to individual. It can be 1-3 years for a mild autism case and 5-10 years for a severe autistic case. And ‘cure’ is not always possible. Cure means the child becomes absolutely normal. For mild autism cases homeopathic cure is possible in many cases if the homeopathic treatment starts early enough. For moderate to severe autism cases, we are usually looking at the graded improvement over a period of time. The improvement can start from anywhere but usually, we see that the classic signs like hand flapping, toe walking reduce first and eye contact improves marginally. Then we see improvement in understanding, comprehension, command following, speech, sensory issues, social acceptance and further eye contact. Some children improve on one variable first, other’s improve on other variables. Some children start responding within the first few weeks, others take a few months to show improvement. If your child has recently been diagnosed with Autism, please understand that there are no ‘magic cures’ for autism. It is going to [...]

By |December 6, 2020|Categories: Autism ASD ADHD, Children's Diseases, Mental Health|0 Comments

How long does Homeopathic Treatment take to cure Autism, Autistic Children?

How long does it take to cure Autism? What is the treatment duration for autistic children? This is a very valid question and often among the first few questions that parents of autistic children ask. The honest answer is that Doctors do not know for sure. It is not only for Autism but also for all other chronic diseases like asthma, allergies,  psoriasis, arthritis, hypothyroidism, eczema etc). The treatment duration varies from individual to individual. It can be 1-3 years for a mild autism case and 5-10 years for a severe autistic case. And ‘cure’ is not always possible. Cure means the child becomes absolutely normal. For mild autism cases homeopathic cure is possible in many cases if the homeopathic treatment starts early enough. For moderate to severe autism cases, we are usually looking at the graded improvement over a period of time. The improvement can start from anywhere but usually, we see that the classic signs like hand flapping, toe walking reduce first and eye contact improves marginally. Then we see improvement in understanding, comprehension, command following, speech, sensory issues, social acceptance and further eye contact. Some children improve on one variable first, other’s improve on other variables. Some children start responding within the first few weeks, others take a few months to show improvement. If your child has recently been diagnosed with Autism, please understand that there are no ‘magic cures’ for autism. It is going to take a lot of effort and time for your child to improve. You [...]

Does homeopathy have any curative treatment for mild or borderline autism?

Homeopathy for Mild or Borderline Autism   Clinically mild autism relates to the cases which do not have any mental retardation or significant hyperactivity associated with it. Cases of mild autism can show some delayed milestones, poor eye contact and social contact. However, there comprehension and command-following is close to normal. Homeopathy does offer treatment for autism and homeopathic medicine does give the best results in cases of mild autism. The more significant is autism, the poorer is the prognosis. Homeopathy for autism is beneficial if classical homeopathic prescribing process if used. This is the standard homeopathic treatment based on cause and symptom similarity. Please consult a classical homeopath for treatment with homeopathy for mild autism

Is there any Homeopathic Medicine for autism, ASD, ADHD?

Homeopathy is a holistic system of medicine. It means that it does not treat diseases, including autism, by its name. While the name is important for diagnosis, prognosis and management, the homeopathic medicine for autism is selected on the basis of cause, presenting symptoms and family history. To find the most suitable homeopathic medicine for autism for a particular case, you will need to consult a professional classical homeopathic Doctor who will take the complete medical history (homeopathic case-taking) and will then prescribe a homeopathic medicine that appears suitable for a particular case of autism in a particular situation.

Can you tell about use and effectiveness of carcinocinum – Autism and ADHD?

Carcinocinum or all other homeopathic remedies are absolutely safe to take in homeopathic doses if agrees with the symptoms of patient and potency / dose is selected by a certified classical homeopathic Doctor. These are available in many potencies. Homeopathic medicines are prescribed on the basis of symptom similarity. Carcinosinum is often more commonly indicated in cases where there is some family history of cancer. But that is not an only factor.

Is there any autism cure in homeopathy?

‘Cure’ is a very big word. It effectively means complete restoration of health. A complete restoration of health is often not possible in a large number of patients. However, different degrees of improvement is possible in different cases of autism depending upon the cause, severity and the accuracy of homeopathic treatment. Autism cure with homeopathy is possible, but the results vary from case to case. Homeopathy is a holistic system of medicine that treats on the basis of symptom similarity. Homeopathic literature documents many cases of autism ‘cured’ with homeopathy or relieved with homeopathy. Homeopathy treatment for autism is only possible with classical homeopathic prescribing. Consult a certified classical homeopathic doctor to find the most suitable homeopathic remedy for the patient (not for autism).