Blog

Blog2021-01-28T00:08:44+05:00

زندگی کا مزہ آنے لگا ہے ۔ فیڈبیک

اسلام وعلیکم سر۔ آپ کے علاج میں کوئی شک نہیں۔ مجھے پہلے ماہ میں ہی واضح تبدیلیاں ملنا شروع ہو گئی تھیں۔ اب ہمیں 4 ماہ ہو گئے ہیں اور میں اپنے آپ کو فٹ محسوس کرتا ہوں۔ ایک دو چیزیں رہتی ہیں وہ اب فوکس کر لیں گے ۔جو مسائل بہتر ہوۓ ہیں وہ آپ کو لسٹ بنا کر بھیج رہا ہوں۔ ۔1 میری بھوک بہت بہتر ہوئی ۔2 مجھے پیاس بالکل نہیں لگتی تھی اب میں ٹھیک ٹھاک پانی پی لیتا ہوں ۔3 کام کاج کو خاص دل نہیں کرتا تھا مگر اب ہر کام دل جمعی سے کر پاتا ہوں ۔4 پہلے میرے مزاج میں غصہ (Anger) اور انزائٹی (Anxiety) بہت تھی اب خوشی اور نرمی آ گئی ہے۔ ۔5 پہلے کسی کام کو کرنے کی قوت ارادی کم تھی اب جس کام کا ارادہ کر لوں اللہ کے کرم سے وہ میرے لیے کرنا مشکل نہیں رہا۔ ۔6 پہلے فیصلے کرنے میں ڈبل ماینڈڈ (Double Minded and Confused) رہتا تھا مگر اب واضح فیصلے کر پاتا ہوں۔ ۔7 اپنے فیصلے اور اردے پر ڈٹ جانے کی صلاحیت بھی پیدا ہو گئی ہے جو کہ پہلے بہت کم تھی۔ ۔8 بال گرنے (Hair Fall Controlled) میں بھی کافی بہتری ہو گئی ہے۔ ۔9 کونفیڈینس (Self Confidence) میں بہت بہتری ہے۔ ۔10 ویٹ بھی گین (Weight Gain) ہوا۔ ۔11 حالات کا سامنا کرنے کی صلاحیت پیدا ہو چکی ہے۔ ۔12 نیگیٹو خیالات (Negative Thoughts) سے پوزیٹو خیالات (Positive Thinking) کا سفر کافی بہتر رہا۔ ۔13 بائیک چلاتے وقت [...]

By |March 8, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|0 Comments

Coronavirus Covid – 19 – Analysis of symptoms from confirmed cases with an assessment of possible homeopathic remedies for treatment and prophylaxis – Dr. Manish Bhatia

Dr. Manish Bhatia provides an in-depth analysis of the recorded symptom-set of patients of Coronavirus Covid-19 infection with an analysis of the possible group of indicated homeopathic remedies for treatment and prophylaxis. Coronavirus Covid-19 – Analysis of symptoms from confirmed cases with an assessment of possible homeopathic remedies for treatment and prophylaxis March 4, 2020Dr. Manisha & Dr. Manish Bhatia Know Your Disease coronavirus latest updates symptoms and homeopathy treatment Read Homeopathy Books by Dr. Bhatia Alert: New important information added in Postscript at the end of the article! Last update: 14th March 2020. The current epidemic (2019-2020) of Coronavirus Covid-19 that started in Wuhan, China, has created a state of panic, which is disproportionate to the mortality rate of this infection. Along with the rising alarm, people in cities where new cases are being discovered, are stocking up on essential medicines, food, masks and sanitizers, creating a shortage in the market for those who really need these products. People have been promoting alternative cures and prophylaxis too and homeopathy seems to be the most promising and most actively circulated prophylaxis through Facebook, Whatsapp and other social media. The most commonly recommended homeopathic medicines are Arsenicum album, Gelsemium, Influenzinum, Mercurius and Argentum nitricum. The Government of India has officially announced Arsenicum album as a likely prophylactic for Coronavirus infection (I have been told that CCRH did consider symptoms published in The Lancet before recommending Ars-alb).[i] The problem with most of these recommendations is that they are not based on actual [...]

By |March 4, 2020|Categories: Professional|0 Comments

Homeopathic Remedy Lachesis mutus (lach.) لیکسیس – The Essence of Materia Medica by George Vithoulkas

Lachesis mutus (lach.) Main idea is overstimulation, which is constantly seeking an outlet for relief, like a pot that is boiling all the time; needs an outlet or will break down. Snake poison; initially the poison goes through the bloodstream, stimulates first, and then on the more specific areas. Primary target is circulation (from study of Materia Medicas you must get the preference of remedies for certain systems). People with idiopathic high blood pressure. Flushes of heat in different ages. Haemorrhages, particularly where the colour is quite dark. Headaches, varicose veins, haemorrhoids, and all kinds of heart ailments. Appearances of ulcers and eruptions – a pink appearance, cyanotic, purplish. Sensation of circulation. Sleep is difficult. Rhythm in the circulation or in the morning. Sleep-morning, these are aggravating times for Lachesis. Worse by heat, if suddenly heated up, which changes the circulation. Worse after entering shower or a very hot room. Worse before menses – as soon as menses starts there is a general amelioration of the patient. Often feel a choking sensation in the throat. Wake up in a panic as if the breath has stopped. Lachesis leads all remedies in the symptom, “wake up in a panic”, worse by a suppression of discharges. Outlet can even be restricted by the clothes, especially around the neck, also chest and waist. Psychological restrictions on the patient will have the same kind of intolerance. If asked to do something immediately by his wife, he will feel the pressure. Intelligent. Easy flow of [...]

میری عمر 25 سال ہے۔ میں ایک ہاؤس وائف ہوں۔ تعلق کراچی سے ہے لیکن شادی کے بعد مجھے لاہور آنا پڑا۔ میرے مسئلے کا آغاز بیس سال کی عمر میں ہوا۔ مجھے اپنے جسم میں مختلف تبدیلیوں کا احساس ہونے لگا۔ میرا وزن بڑھنے لگا۔ مینسز، حیض میں بے قاعدگی (irregular menstrual cycle) آنے لگی۔ میری جلد بہت حساس (sensitive skin) ہو گئی اور اکثر الرجی (Allergy) رہنے لگی۔ ان تبدیلیوں نے جہاں میرے جسم کو نقصان پہنچایا وہاں ذہن بھی متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکا۔ اس ساری صورت حال نے مجھے دقیانوسی بنا دیا اور میں بہت زیادہ منفی سوچنے لگی۔ مجھ پر ہر وقت مایوسی (depression) طاری رہتی۔ میں پریشانی اور ذہنی دباؤ (mental stress) کا شکار رہتی۔ ان تمام تکلیف دہ مسائل کا نتیجہ ایک انتہائی اذیت ناک بیماری بواسیر (piles / hemorrhoids) کی شکل میں نکلا۔ پچھلے دو سال سے میں ان تمام مسائل سے دوچار تھی اور ہومیوپیتھک علاج کروا رہی تھی۔ لیکن بواسیر کی علامات کے تحت دی جانے والی ادویات مجھے آرام دینے میں ناکام رہیں۔ پچھلے سال حمل کے دوران میری حالت بہت خراب تھی اور ڈیلوری کے بعد تو صورت حال نہایت ابتر ہو گئی۔ خونی بواسیر نے میرا جینا دوبھر کر دیا۔ میں اپنی اصل حالت سے بے خبر تھی کیونکہ میں اس مسئلے کے لئے کبھی کسی ایلوپیتھک ڈاکٹر کے پاس نہیں گئی تھی۔ میں نے کبھی اپنا معائنہ نہیں کروایا تھا۔ فیملی ہسٹری میں دل اور شوگر کی بیماریوں کا رجحان تھا اس لیے مجھے اندازہ تھا [...]

شدید حساسیت، نیند، بھوک اور سر درد کے مسائل ۔ ہومیوپیتھک دوا اسارم کا دلچسپ کیس ۔ حسین قیصرانی

25 سالہ ڈاکٹر ملک نے اپنے پرانے اور بے شمار مسائل پر بات کرنے کے لیے اسلام آباد سے فون کیا۔ ان کی صحت کی صورت حال بہت پیچیدہ تھی کیوں کہ کچھ مسائل بہت نمایاں تھے اور کچھ بے پناہ مبہم اور الجھے ہوئے۔ سب سے پہلے واضح اور زیادہ تکلیف دہ مسائل (Uppermost Layer) کا علاج شروع کیا گیا۔ ڈاکٹر صاحبہ کو نیند (sleeplessness) نہیں آتی تھی اور اگر کسی طرح آنکھ لگ بھی جاتی تو ڈراؤنے خواب (nightmares) پریشان کرتے تھے۔ ایک اَن جانا خوف (Fear & Phobia of Unknown) طاری رہتا تھا۔ بلا وجہ انگزائٹی (Anxiety) رہتی جیسے کوئی الجھن ہو۔ وہ (Anorexia) کا شکار تھی۔ بھوک محسوس ہی نہیں ہوتی تھی۔ جسم پر کپکپی طاری رہتی تھی۔ مسائل اتنے پرانے اور شدید نوعیت کے تھے کہ مریضہ کو اس مقام تک پہنچنے میں وقت لگا جہاں اس کے بنیادی مسائل بہتر ہونے لگے اور کچھ نئی علامات ظاہر ہوئیں جو کسی حد تک غیر معمولی بھی تھیں اور غیر واضح بھی۔ ان سے فون، ای میل اور وٹس ایپ کے ذریعے رابطہ رہا۔ کچھ شکایات جو مسلسل موصول ہو رہی تھیں وہ زیادہ نمایاں تو نہ تھیں مگر انھوں نے انہیں پریشان کر رکھا تھا۔ ان کا فیڈبیک جاری رہا اور کیس پر نظرثانی کی جاتی تھی۔ بار بار کی ڈسکشن سے مریضہ کی علامات کا ایک بالکل نیا رخ سامنے آیا یا یوں کہہ لیں کہ بہت سی پیچیدہ اور غیر واضح علامات کی کڑیوں سے کڑیاں ملتی چلی گئیں جنھوں نے علاج کی [...]

By |February 26, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Mental Health, SOLVED CASES|0 Comments

Corona Virus – what homeopathy can do? Burning questions of the day, answered by Prof. George Vithoulkas

Q. What is your opinion of Corona Virus, what homeopathy can do? A. Unless we have selected the real symptoms of the different stages of this influenza from the clinicians who are dealing at this moment with the infected cases,we cannot do anything substantial. We should know the symptomatology of the beginning stages -before the pneumonia- and propose remedies for this stage in order to reduce the victims of going to the second stage. Also we should know the symptomatology of the later stage of pneumonia or diarrhea to propose different remedies for this advanced stage. But the symptomatology has to be taken by an experienced homeopath in order to be reliable. I think the best would be to establish contact with the clinicians in order to give us a first hand information. To give at random remedies as a prophylaxis and to make people think that they are protected it is irresponsible. Q. What do you think about those homeopaths who advertise that are treating cancer cases using homeopathic remedies while at the same time the patients are treated with allopathic drugs? Advertising that cancer cases can be cured by homeopathy in spite of the fact patients are treated with conventional drugs is an unethical act that should be avoided at all costs by any honest homeopath. The reasons are simple. A. The homeopathic remedy will act if it is prescribed according to the symptoms of the case. But in such a situation where the patient is under chemotherapy, [...]

By |February 15, 2020|Categories: George Vithoulkas, Homeopathic Awareness, Professional|0 Comments

رحم کی رسولیاں، فبرائیڈ، سر درد، کمر درد اور ہارمون کے مسائل ۔ كامیاب كیس، علاج اور دوا ۔ حسین قیصرانی

Click HERE For Original / English Version of this Case. A Solved Case of Polycystic Ovary Syndrome (PCOS), Uterine Fibroids and Ovarian Cysts – Homeopathic Treatment and Medicine (Hussain Kaisrani) (رواں اردو ترجمہ: محترمہ مہرالنسا) ڈنمارک (Denmark) کی رہائشی، دو بچوں کی والدہ، ڈاکٹر مسز خان نے علاج کے لئے فون پر رابطہ کیا۔ اسی سال ہی وہ اپنی پی ایچ ڈی (PhD) مکمل کر کے وہاں کی مشہور یوینورسٹی میں ریسرچ آفیسر تعینات ہوئی تھیں۔ گزشتہ چند سالوں کی بے پناہ مصروفیت نے انہیں ڈسٹرب کر دیا تھا۔ وہ سوچتی تھیں کہ تعلیم مکمل ہوتے ہی ایک اطمینان اور سکون والی زندگی کے مزے لوٹیں گی مگر اب جب وہ فارغ ہوئیں تو اندازہ ہوا کہ مزے تو کیا وہ روٹین لائف بھی نہیں چلا سکتیں۔ سب سے اہم مسئلہ تو رحم میں رسولیوں (Ovarian Cysts) ، (PCOD / PCOS) اور فائبرائیڈ (Fibroid) کا تھا تاہم اس کے علاوہ بھی وہ کئی جسمانی، جذباتی، ذہنی اور نفسیاتی تکلیفوں (Physical, emotional imbalances) میں پھنسی ہوئی تھیں۔ گزشتہ کئی سالوں سے وہ اس قدر مصروف رہیں اور پھر جوش جذبہ بھی خوب تھا تو مسائل پر مناسب توجہ دینے کا موقع ہی نہ مل سکا۔ اِدھر تھوڑی سی تکلیف ہوئی؛ اُدھر کوئی دوائی کھا لی۔ مگر اب دوائیاں بھی کام کرنا چھوڑ رہی ہیں۔ وٹس اپ پر گھنٹہ بھر کیس ڈسکس کرنے سے درج ذیل صورت حال سامنے آئی۔ جسمانی مسائل جسم میں جگہ جگہ درد رہتا ہے۔ خاص طور پر کندھوں اور کمر میں تو ہر وقت اور بہت زیادہ۔ اٹھتے [...]

مائیگرین، درد شقیقہ یعنی آدھے سر کا درد ۔ کامیاب کیس، ہومیوپیتھک دوائیں اور علاج ۔ حسین قیصرانی

وہ مرکز تھی کالج کی ساری سکھیوں کا کیوں نہ ہوتی وہ تھی ہی ایسی قدرت نے دلکش رنگوں سے اسے تراشا تھا کشمیری چہرے پہ آنکھیں غزل سناتی تھیں ہنستی تھی تو جھرنوں سے آوازیں آتی تھیں سنگی ساتھی سارے اس کے گرد منڈلاتے تھے اس کے ناز اٹھاتے تھے وہ مرکز جو تھی نازاں تھی اور ناداں بھی بھول گئی تھی مرکز کو تو بالآخر تنہا جلنا پڑتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔!۔ اہم ہونا کسے اچھا نہیں لگتا لیکن اگر ہم اہم ہونے کے ساتھ ساتھ حساس بھی ہوں تو نتائج مختلف بلکہ پریشان کن ہو سکتے ہیں۔ ہمارے دوست، ہمارے چاہنے والے اور دکھ سکھ کے ساتھی ہمارے دل میں ایک خاص جگہ بنا لیتے ہیں۔ ہمیشہ یہ احساس دلانے والے ساتھی کہ وہ ہمارے بغیر نہیں رہ سکتے، وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اپنی اپنی منزل کی جانب ہجرت کرنے لگتے ہیں لیکن ان کے پیچھے رہ جانے والے دکھ ہجرت نہیں کرتے بلکہ اندر سرایت کرنے لگتے ہیں۔ اور غیر محسوس انداز میں ہمارے ذہن کے کسی کونے میں اپنا ٹھکانہ بنا لیتے ہیں؛ خاموشی سے ہماری شخصیت کے تانے بانے بکھیرنے لگتے ہیں اور یہ سلسلہ چلتا رہتا ہے تاوقتیکہ کوئی ان کے ٹھکانے تک نہ پہنچ جائے ۔۔۔۔۔۔ شدید سر درد میں مبتلا ڈاکٹر "ف" کے ساتھ بھی کچھ ایسا ہی ہوا۔ وہ میرے پاس اپنے میگرین (Migraine) کے علاج کے لئے آئی تھی۔ کہنے لگیں:میں سال بھر سے مستقل سر درد میں مبتلا ہوں۔ پہلے تو یہ کسی نہ کسی دوائی سے وقتی طور [...]

کراچی سے آن لائن علاج کا تجربہ ۔ محمد حماد شیخ

میں محمد حماد شیخ کراچی کا رہائشی ہوں۔ میں، میری وائف اور تین بچے مستقل طور پر ایلوپیتھک دواؤں پر زندگی گزار رہے تھے۔ آئے روز نت نئے مسائل کا شکار تھے۔ مسائل تھے کہ بڑھتے ہی جاتے تھے اور ایلوپیتھک ڈاکٹرز بھی بہت آزمائے جا چکے تھے۔ ایک دن اتفاقی طور پر میں ڈاکٹر احمد حسین قیصرانی صاحب کے آفس میں تھا اور ڈاکٹر صاحب کسی مریض کو فون پر دوا بتا رہے تھے۔ اس سے مجھے پتہ لگا کہ ڈاکٹر صاحب ایک بہت ہی ماہر ہومیوپیتھ ہونے کے ساتھ ساتھ سائیکوتھراپسٹ (Psychotherapist) بھی ہیں۔۔۔ وہ دن میری زندگی کا ایک خوبصورت دن تھا کہ اس دن میری ملاقات ایک نہایت قابل، انرجیٹک، موٹیویشنل اور کیئرنگ ڈاکٹر احمد حسین قیصرانی صاحب سے ہوئی اور پھر میری زندگی نے ایک نیا موڑ لیا جس کے لئے میں اللہ کے بعد ڈاکٹر صاحب کا ہمیشہ ممنون رہوں گا۔ اللہ تعالی ڈاکٹر صاحب کو ہمیشہ خوش و خرم رکھیں۔ آمین!میری وائف کافی عرصہ سے مستقل طور پر ماہر نفسیات ڈاکٹر (Top  Psychologist  /  Best  Psychiatrist) کی دوائیں لے رہی تھیں۔ انہیں ٹینشن (Tension / Stress)، ڈپریشن(Depression)، انزائٹی (Anxiety)، فوبیاز (Fear  and  Phobia)، معدہ میں تیزابیت  ایسڈیٹی (Acidity)، قبض (Constipation)، نیند نہ آنا (Insomnia  and  Sleeplessness)، سانس گھٹنا (Shortness   of   Breath) وغیرہ کے ساتھ ساتھ گائنی مسائل بھی تھے۔ میری چھوٹی بیٹی جو کہ تقریبا ڈیڑھ سال کی ہے وہ پیدائشی کمزور تھی، پھیپھڑے کمزور تھے اور اسے مستقلاً ایلوپیتھک دواؤں پر رکھا گیا تھا، اسے مہینہ میں ایک بار یا دو بار [...]

میں اور میرا قیصرانی ۔ ایک جذباتی فیڈبیک ۔ امجد عزیز خٹک

میں اس بات کا تذکرہ نہیں کروں گا کہ مجھے میرا قیصرانی کیسے ملا ... بس اس رب کا شکر ہے کہ مل گیا ... مجھے کون سا مسئلہ تھا کہ نہیں تھا ... اس کی تفصیل لکھنا بھی ممکن نہیں .. لیکن 12 اپریل 2019 کو میں نے یہ فیصلہ کیا کہ مجھے قیصرانی کے ہاتھ سے دست شفا کا سفر اللہ کے اذن سے شروع کرنا چاہیے ... قیصرانی سے رابطہ کیا .. اور انہوں نے مجھے خوش آئیند رسپونس دیا ... مجھے لگا کہ ان سے بات کرتے کرتے مجھے شفا کا دامن مل گیا .. اللہ نے میری سن لی .. انہوں نے میری سائیکوتھراپی شروع کردی .. مجھے ایسے ٹریٹ کیا جیسے کہ یہ میرے گھر میں میرے پاس موجود ہوں۔ میں جو کسی کام کے قابل نہ تھا .. آہستہ آہستہ زندگی کی طرف لَوٹنے لگا.. جس کے لیے چلنا مشکل تھا وہ 8 کلومیٹر کی بے تکان چال چلنے لگا .. جسے دوسروں سے بات کرتے موت پڑتی تھی؛ اب گھنٹوں بولنے لگا.. جو اپنے آپ کو فالتو سمجھتا تھا کارآمد بن گیا... جو کبھی اس وجہ سے پکچر نہیں بناتا تھا کہ میں برا لگتا ہوں .. اب سیلفی پہ سیلفی بنانے لگا .. الغرض جو ذرہ بھی نہ تھا اللہ نے قیصرانی کے ہاتھ سے اسے گوہر بنا دیا .. اگر میں مبالغہ کی تھوڑی روشنی سے قیصرانی کو منور کروں تو یہ کہنا بے جا نہ ہوگا کہ میرا قیصرانی کروڑوں نہیں تو لاکھوں میں زندہ مثال صْرور ہے ... [...]

بلندی، تنگ جگہ اور معدہ کی خرابی سے ڈر خوف فوبیا، پینک اٹیک اور سانس بند ہونا ۔ فیڈبیک

السلام و علیکم بھائی جان کیسے ہیں؟ رات مجھے صبح کے ٹور (Tour) کی کوئی ٹینشن (Tension) نہیں تھی. اور میں بالکل ریلکس (Relax) اٹھا۔ میں صبح گھر سے بس ٹرمینل کا سفر بھی بغیر کسی فکر میں تھا اور ٹکٹ سے لے کے گاڑی میں بیٹھنے تک بھی کوئی پریشانی نہ تھی۔ سیٹ نمبر 6 تھی اور ہیٹر بھی چل رہا تھا لیکن پھر بھی مشکل نہیں ہوئی... درمیان میں 30 منٹ سویا بھی۔ راستے میں ایک جگہ 15سے 20 سٹوڈنٹ تھے۔ انھوں نے ہماری گاڑی روکی کہ ہمیں اس گاڑی میں بٹھائیں ورنہ ہم گاڑی کا نقصان کر دیں گے۔ یہ معاملے دیکھ کے بھی میں ایزی تھا مطلب ہارٹ بیٹ مکمل کنٹرول (Heart  Beat    under     control) تھی .. کوئی ڈر والی کفیت نہیں تھی   ..  اور میں خیریت سے پہنچ گیا الحمد للہ ... وہاں پہنچ کے کام بھی ایزی ہو گیا تھا صیحت کے حوالے سے کوئی مشکل نہیں ہوئی.. ایسا بہت عرصہ بعد پہلی بار ہوا ہے۔ ورنہ یہ سفر میرے لئے ایک مصیبت ہوتا تھا۔ جانے سے کئی دن پہلے میری حالت خراب ہو جایا کرتی تھی۔ سارے سفر میں دل بے قابو رہتا تھا۔ لڑائی جھگڑے دیکھتے ہی انزائیٹی (Anxiety) شروع ہو جاتی تھی۔ گاڑی میں ہیٹر چلتا تھا تو میرا دم گھٹتا تھا سانس بند (Panic Attack) ہونے لگتا۔ الحمد للہ میں واپس بھی خیریت سے پہنچ گیا ہوں۔ آج جو سب سے اہم بات تھی وہ یہ کے میں نے آج کا سفر بغیر دوائی کھائے کیا کئی سالوں [...]

By |February 2, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, Testimonials|0 Comments

سانس کی شدید تنگی، دم گھٹنا، نیند کے مسائل اور مستقل غصہ ۔ کامیاب علاج اور دوائیں ۔ حسین قیصرانی

چھ ماہ پہلے تیس سالہ مسز ایچ نے ناٹنگھم برطانیہ (Nottingham, UK) سے کال کی۔ محترمہ تین بچوں کی والدہ ہیں اور پچھلے دس سال سے برطانیہ میں مقیم ہے۔ تفصیلی گفتگو سے پتہ چلا کہ ان کا تعلق اسلام آباد (پاکستان) کے اعلیٰ تعلیم یافتہ خاندان سے ہے۔ اپنی ایک فیملی فرینڈ کے پر زور اصرار پر مجھ سے رابطہ کیا۔ ان کے مسائل وہاں کے ڈاکٹرز کے لیے نا قابلِ فہم بھی تھے اور نا قابلِ علاج بھی۔ وہ اچانک سانس کی شدید تکلیف میں مبتلا ہو گئی تھیں۔ حالاں کہ صرف چند ماہ پہلے تک وہ بہت اچھی صحت کی حامل تھیں۔ سالوں سے انہیں کسی ڈاکٹر یا باقاعدہ دوائی لینے کی ضرورت محسوس ہی نہ ہوئی تھی لیکن جس تکلیف نے ان کی روزمرّہ زندگی کو مشکل بنا دیا وہ سانس لینے میں رکاوٹ کا شدید احساس تھا۔ یہ مسئلہ اس قدر شدت اختیار کر رہا تھا کہ ان کے لیے کھانا اور بات کرنا بھی مشکل ہو گیا تھا۔ کیس دیتے وقت بھی اُن کو سانس بُری طرح رک رہی تھی۔ اس لیے محترمہ نے نیشنل ہیلتھ سروس (NHS) سے چیک اپ کروانے کا فیصلہ کیا۔ کئی لیبارٹری ٹیسٹ (Laboratory Test) ہوئے مگر جب کچھ واضح نہ ہو سکا تو ڈاکٹرز کا خیال تھا کہ سانس کی اس قدر تنگی دل کے عارضے کی وجہ سے ہو سکتی ہے۔ ای سی جی (ECG) کی گئی۔ رپورٹ نارمل نہیں تھی لیکن واضح بھی نہیں تھی کہ واقعی کوئی مسئلہ ہے۔ تفصیلی چیک اپ کے لیے محترمہ کو [...]

ڈپریشن، غصہ، وہم، وسوسے، منفی سوچیں، آسیب کا ڈر، خوف اور فوبیا ۔ کامیاب علاج ۔ حسین قیصرانی

گوجرہ کے 28 سالہ نوجوان آفیسر مسٹر ایم نے اپنے  مسائل کے بارے میں بات کرنے کے لیے وٹس اپ پر رابطہ کیا۔ ان سے بات چیت کا سلسلہ گھنٹہ بھر رہا۔ تین بچوں کے باپ ہیں مگر حصولِ تعلیم کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ کافی عرصے سے کئی ذہنی اور جسمانی مسائل سے دوچار تھے جس کے لیے مختلف ایلوپیتھک، ہومیوپیتھک اور حکیموں کو آزما چکے تھے۔ نوجوانی کی ان تکالیف نے ان کے معیار زیست کے ساتھ ساتھ ذہنی، جذباتی اور نفسیاتی (Emotional, Mental and Psychological) معاملات کو بھی خاصا نقصان پہنچایا تھا۔ تعلیم، دوستی، ازدواجی و معاشرتی زندگی، پیشہ وارانہ قابلیت، جسمانی صحت، جذباتی توازن اور قلبی سکون غرض زندگی کا کوئی پہلو متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکا۔ دماغ منفی سوچوں کی آماجگاہ بن چکا تھا جہاں تازہ ہوا کے لیے کوئی روشن دان نہیں تھا۔ ٹیلیفونک گفتگو اور علاج کے دوران جاری رابطہ سے حاصل کی گئی تکالیف کی تفصیل ذیل میں درج ہے۔ کاہلی اور سستی (Lethargy and Laziness) نے مسٹر کو بہت پریشان کر رکھا ہے۔ کوئی بھی کام وقت پر نہیں ہوتا۔ با صلاحیت ہونے کے باوجود  لمبے عرصے سے کوئی بھی ہدف، پلان اور منصوبہ پورا نہیں کیا جاتا۔ آرام پسندی شخصیت کے تمام مثبت اوصاف پر حاوی تھی۔ قوت ارادی (Will Power) اور استقامت کی انتہائی کمی (Lack of Consistency) ہے۔ کافی عرصےسے کچھ  تعلیمی امتحان بلا کوشش ہی ملتوی کیے جا رہے ہیں۔ امتحان کی تیاری کرنے کی طرف دھیان نہیں جاتا اور پیپر والے دن جانے کو دل [...]

By |January 21, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES|0 Comments

مائیگرین، درد شقیقہ یعنی آدھے سر کا درد کامیاب علاج ۔ میڈیکل ڈاکٹر کا فیڈبیک

(رواں اردو ترجمہ و کمپوزنگ: مہرالنسا) میں درد شقیقہ، میگرین (Migraine) اور شدید سر درد (Headache) میں مبتلا تھی جس نے میری زندگی مفلوج کر دی تھی۔ یہ درد میری جسمانی اور ذہنی صحت (Physical, emotional and mental health) کو بری طرح متاثر کر رہا تھا۔ بہت سارے ڈاکٹرز سے علاج کروایا لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ میں ہر ایک سے پوچھتی پھرتی کہ کسی اچھے ڈاکٹر کا بتائیں جو مجھے اس مائیگرین، درد شقیقہ سے چھٹکارہ دلائے۔ پھر ایک دن ایک سینئر ڈاکٹر کے توسط سے میں ڈاکٹر حسین قیصرانی سے ملی اور انہیں اپنا مسئلہ بتایا۔ صرف پندرہ دن میں مجھے ان کے ہومیوپیتھک دوا علاج سے واضح فرق محسوس ہوا۔ حالانکہ میں متواتر انٹی ڈپریسنٹ (Anti Depressants) کھاتی تھی۔ اس سے پہلے ٹاپ سپیشلسٹ ڈاکٹرز نے مجھے انڈیرال (Anderol) کے تین ماہ اور چھ ماہ کے کورسز کروائے۔ میں مسلسل کیفلام (Caflam) لیتی تھی لیکن درد پھر بھی بے انتہا رہتا تھا۔ میں اتنے لمبے عرصے بعد جسمانی اور ذہنی طور پر اتنی تیزی سے صحت یاب ہوئی ہوں۔ ڈاکٹر حسین قیصرانی ایک منفرد ہومیوپیتھک ڈاکٹر، سائیکالوجسٹ اور سائیکوتھراپسٹ ہیں۔ میں ان کے علاج سے %101 مطمئن ہوں۔ جہاں تک ذہنی صحت کا تعلق ہے، حالات کچھ بھی ہوں وہ امید کی کرن دکھا کر آپ کی زندگی کو بہتر کرنے کا کوئی نہ کوئی راستہ دکھا دیتے ہیں۔ جب آپ کے ارد گرد بلکہ ہر طرف مایوسی کا اندھیرا چھا جائے تو وہ روشنی کا ذریعہ بن جاتے ہیں۔ جب سب دروازے بند ہوں تو وہ [...]

کان درد، کان بہنا، کان کے شدید مسائل، فنگس، الرجی، بواسیر، سر درد اور مائیگرین ۔ کامیاب علاج ۔ فیڈبیک

میرا تعلق نارووال سے ہے۔ میں ایک ہاؤس وائف ہوں۔ شوہر بیرون ملک مقیم ہے جس کی وجہ سے تینوں بچوں اور گھر کی مکمل ذمہ داری میری ہے۔ میرے مسائل کی فہرست بہت طویل ہے۔ اور ان مسائل کی وجہ سے میں نے کئی سال بہت اذیت میں گزارے۔ دس سال پہلے میرے کانوں میں انفیکشن کی تکلیف شروع ہوئی۔ کان ہڈی کے اوپر سے سوج جاتا تھا اور اندر سے پھول جاتا تھا۔ کان کے اندر پیپ، ریشہ اور مواد بھر جاتا تھا۔ کان کے باہر کی طرف پیلا ریشہ نکلتا اور ذرا گہرائی سے صاف کرنے پر سبز بد بودار مواد نکلتا۔ بار بار لگنے والے ہائی پوٹینسی اینٹی بائیوٹکس انجیکشنز سے یہ مواد کالا ہو جاتا اور ڈھیلوں کی شکل میں باہر نکلتا اور پھر کان میں شدید کھجلی اور خارش ہوتی۔ میں ایک دن میں تین تین انجیکشنز لگواتی تھی۔ جب دایاں کان ٹھیک ہوتا تو بایاں خراب ہو جاتا تھا۔ درد کی شدت ناقابلِ برداشت ہوتی تھی۔ کان کے نیچے سے پٹھوں کا کھچاؤ گردن تک جاتا اور کندھوں تک پھیل جاتا تھا۔ میرا دوسرا بہت ہی عجیب مسئلہ شدید قسم کا سر درد (Headache) یعنی میگرین (Migraine) تھا۔ میرے سر میں شدید درد اٹھتا۔ یہ درد سر کے پچھلے حصے سے شروع ہوتا اور آہستہ آہستہ پورے سر میں پھیل جاتا۔ پھر آنکھیں دکھنے لگتی اور درد جبڑوں تک پہنچ جاتا۔ سارا چہرہ درد کرنے لگتا تھا۔ پٹھوں میں کھچاؤ ہو جاتا تھا۔ درد کی وجہ سے مجھے نیند نہیں آتی تھی۔ متلی [...]

مستقل سانس پھولنا، دم گھٹنا، پینک اٹیک، شدید غصہ، انگزائٹی اور نیند کے مسائل ۔ انگلینڈ سے فیڈبیک

میں نے ایک فیملی فرینڈ کے کہنے پر ڈاکٹر حسین قیصرانی سے رابطہ کیا۔ میری طبیعت بہت خراب تھی۔ سانس کی تکلیف اتنی بڑھ چکی تھی کہ میرے لیے ڈاکٹر صاحب سے بات کرنا بھی مشکل تھا۔ لیکن حیرت انگیز بات یہ تھی کہ ڈاکٹر صاحب سے بات کرنے کے دوران مجھے اپنی طبیعت میں بہتری محسوس ہوئی۔ مجھے لگا کہ وہ میری بات کو میرے نقطہ نظر کے مطابق سمجھ رہے ہیں۔ بات کرنے کے دوران میری سانس پھول رہی تھی لیکن ڈاکٹر صاحب نے بیزاری کا کوئی تاثر نہیں دیا۔ انہوں نے میری بات نہایت توجہ اور شفقت سے سنی۔ میں نے اپنی کیفیات کو تفصیل سے بیان کیا۔ اور اس طرح میرا علاج شروع ہوا۔ دوائی کے ساتھ میری سائیکوتھراپی (Psychotherapy) بھی جاری رہی۔ میں نے انھیں علاج کے سلسلے میں بہت فرض شناس پایا۔ انگلینڈ اور پاکستان کی ٹائمنگ میں بہت فرق ہے لیکن ٹائمنگ کا فرق بھی ڈاکٹر صاحب سے رابطہ پر کبھی اثر انداز نہیں ہوا۔ دن ہو یا رات مجھے جب بھی ضرورت محسوس ہوئی، ڈاکٹر صاحب کو میسر پایا۔ ان کا طریقہ علاج بے حد قابلِ تعریف ہے۔ میرے بہت ہی الجھے ہوئے مسائل کو بہت ٹیکنیکل انداز میں حل کیا۔ میری سانس کی تکلیف اب %90 بہتر ہے۔ میں آرام سے بات چیت کر لیتی ہوں۔ پہلے تو سانس اتنا پھولا (Short  Breath) رہتا تھا کہ کچھ کھانا بھی مشکل ہو جاتا لیکن اب میں سہولت سے کھانا کھاتی ہوں۔ میری نیند بالکل ختم ہو چکی تھی۔ میں آنکھیں بند کیے [...]

معدہ کے مسائل، نیند کی کمی، شدید غصہ، الرجی، آسیب جن بھوت کا ڈر، خوف ۔ کامیاب علاج ۔ فیڈبیک

فیڈ بیک تقریباً تین ماہ قبل کی بات ہے کہ میں نے وٹس اپ (Whatsapp) پر جب محترم ڈاکٹر حسین قیصرانی سے علاج کے لئے رابطہ کیا۔ اس سے پہلے بھی میں کافی جگہوں سے علاج کروا چکا تھا۔ ہومیوپیتھی کا سٹوڈنٹ ہونے کے حوالے سے بھی کسی ڈاکٹر کا مجھے مطمئن کرنا ایک کارِ دشوار تھا۔ بہرحال قصہ مختصر میری بڑی بڑی شکایات درج ذیل تھیں: 1۔ شدید قسم کا ذہنی دباؤ (Depression / Stress) رہتا تھا۔ یوں محسوس ہوتا تھا جیسے ذہن سویا ہوا ہے۔ میں بگڑے ہوئے حالات پر کڑھتا رہتا تھا۔ بیوی کی تیکھی باتوں سے شدید جذباتی دھچکا (Mental Shock) لگتا تھا اور انتہائی غصہ (Anger) آتا تھا۔ لیکن میں اپنا غصہ پی جاتا تھا لیکن بے حد بے بسی محسوس ہوتی تھی۔ معلوم نہیں کہ اب حالات بالکل بدل گئے ہیں یا پھر میں بدل گیا ہوں۔ گھر میں کوئی بھی بات ہو میں نظر انداز کر دیتا ہوں۔ اپنی بیوی کے لیے کوئی گفٹ لے کر جاتا ہوں اور اگر کوئی ناخوشگوار بات ہو تو موضوع ہی بدل دیتا ہوں۔ میں خود کو بہت ہلکا پھلکا محسوس کرتا ہوں۔ میرے ذہن پر اب بوجھ نہیں ہوتا۔ 2۔ سستی اور کاہلی اتنی تھی کہ مسلسل کئی سال سے کچھ پیپر چھوڑ رہا تھا، دے نہیں پاتا تھا۔ کتابیں سامنے پڑی ہوتی تھیں لیکن میں پڑھتا نہیں تھا۔ کام چوری میری فطرت تھی۔ لیکن الحمد للہ اب میں تمام پیپرز ایک ایک رات پڑھ کر بہترین انداز میں دے چکا ہوں۔ 3۔ قوت ارادی انتہائی [...]

Piles / Hemorrhoids / varicose veins / بواسیر / Fissures – Homeopathic Case Presentation, Treatment and Feedback

I’m a 25 year old housewife, spent all my life in Karachi, moved to Lahore after marriage. Root of my problem sprouted during 20th year of my life. I started noticing different changes in my body i.e. from gaining weight to irregularity in menstrual cycle to different skin allergies / infections. These changes affected my body as well as my mind. All this gradually made me Superstitious and an Overly Negative thinker which ultimately resulted in the development of anxiety, stress and depression. Now all these troublesome changes have turned into an extremely painful and embarrassing illness called “Piles” / Hemorrhoids / Bawaseer (بواسیر). I’m having above mentioned condition since past two years for which I was taking homeopathy treatment. Since Piles was not a byproduct of my diet or unhealthy lifestyle only, symptomatic treatments failed to sustain a relief. Consequently my condition went bad during my pregnancy last year and further got worse after my delivery this year. My exact condition (either I am having recurrent fissures, hemorrhoids or both) is still unknown because I have never seen an allopathic doctor, hence no physical examination has done yet. I was prone to such diseases at some stage in my life because of heart and diabetes history in my family. Nature was giving me signs which I ignored and here I am getting my treatment from Doctor Hussain Kaisrani since past 2.5 months. My physical symptoms include, bleeding and severe pain in bowel movements, sharp shooting pains and burning after [...]

By |January 11, 2020|Categories: Digestive System, Mental Health, Testimonials|0 Comments

ناک کے ارد گرد پمپل دانے سرخی ۔ کامیاب علاج ۔ فیڈبیک

میری تکلیفوں اور مسائل کی داستان بہت پیچیدہ، مبہم اور الجھی ہوئی ہے۔ اس لئے میں اس کی تفصیل میں نہیں جانا چاہتا۔ یہ میری سمجھ سے بالاتر ہے کیوں کہ کوئی ڈاکٹر تو کیا میں خود بھی نہیں سمجھ پایا کہ میرے اندر کیا چل رہا ہے۔ یہ صرف میرے موجودہ ڈاکٹر حسین کا کمال ہے وہ نا صرف میرے مسائل کو سنتے اور سمجھتے ہیں بلکہ جب میں اپنے مسائل کو بیان نہیں کر پاتا تووہ میرے مسائل کی واضح تصویر بھی پیش کرتے ہیں۔ وہ ایک منفرد سائیکالوجسٹ (Psychologist)، سائیکوتھراپسٹ (Psychotherapist) اور ہومیوپیتھک ڈاکٹر ہیں۔ چائنہ (CHINA) میں ایک سائنس سٹوڈنٹ اور ایک پی ایچ ڈی (PhD Scholar) ریسرچر ہونے کی حیثیت سے میں یہ سمجھتا تھا کہ ہومیوپیتھک میں تحقیق کم ہے اور فرضی کہانیاں زیادہ۔ میرا ایک دوست نامور سائنسدان اور پی ایچ ڈی ڈاکٹر ہے۔ اس نے مجھے قائل کیا کہ میں ہومیوپیتھک ڈاکٹر حسین قیصرانی سے علاج کرواؤں۔ اس نے مجھے اپنے بارے میں بتایا کہ کس طرح وہ زندگی سے دور ہو چکا تھا۔ پاکستانی اور غیرملکی ڈاکٹرز سے علاج کروانے اور ہسپتالوں میں داخل رہنے کے باوجود کوئی ڈاکٹر اس کے مسائل کو حل نہ کر سکا۔وہ مایوس ہو چکا تھا۔ اس نے بتایا کہ اس نے ڈاکٹر حسین سے علاج کروایا اور اب وہ مکمل طور پر زندگی کی طرف لوٹ آیا ہے۔ اس وقت وہ دوائیوں سے آزاد، پُر لطف، صحت مند اور بے حد کامیاب زندگی گزار رہا ہے۔ اس کے بے حد اصرار پر میں نے خود [...]

فوڈ الرجی، معدے کی پرانی اور شدید تکالیف ۔ کامیاب علاج ۔ فیڈبیک

چند دن پہلے سکول میں پارٹی تھی؛ کھانے کے ساتھ کوک تھی ۔۔۔۔ میں کوک وغیرہ نہیں پی سکتی تھی؛ وہ جہاں جہاں سے گزرتی ہے لگتا ہے کٹ لگ رہے ہیں اور اس کے بعد معدہ زخمی محسوس ہوتا ہے۔ کھانے میں مرچیں تیز تھیں۔ مجھے پانی کی طلب تھی لیکن وہاں پانی نہیں تھا۔ ارد گرد سب کوک کو کسی متبرک پانی کی طرح غٹاغٹ اندر انڈیل رہے تھے۔ پیاس کی طلب کے باعث میں نے بھی ایک گھونٹ بھرا لیکن ۔۔۔۔۔ میں نے محسوس کیا کہ مجھے کچھ بھی تو نہیں ہوا۔ میں نے اگلا گھونٹ لیا۔ سب ٹھیک تھا۔ کوک کا ذائقہ اتنا برا نہیں تھا یا شائد میں سالوں بعد چکھ رہی تھی۔ میں نے پورا گلاس پی لیا ۔۔ ہاہا ۔۔ کچھ بھی نہیں ہو رہا تھا۔ یہ زبردست تھا۔ اگلا واقعہ چند دن بعد ہی ہوا۔ انڈہ کھانا میرے لیے ایک خواب ہی تھا۔ میں نے کوک والے تجربے کو یاد رکھتے ہوئے آملیٹ کے ساتھ ایک نوالہ لیا۔ کچھ دیر توقف کیا۔ حالات بالکل نارمل تھے۔ دوسرا نوالہ، پھر تیسرا ۔۔۔۔ اور میں نے پورا آملیٹ کھا لیا۔ کیا کوئی یقین کر سکتا ہے مجھے کچھ بھی نہیں ہوا؟ ورنہ معدہ پھول جاتا؛ ایمرجنسی جانا پڑتا اور شدید بری حالت ہو جاتی ۔۔ لیکن میں نے یعنی میں نے پورا انڈہ کھا لیا۔ اب میرا حوصلہ کچھ بلند ہو گیا۔ اس دن بہت سردی تھی۔ راستےمیں بارش ہوتی رہی تھی۔ میں نے ایک انڈہ ابلنے رکھ دیا۔ مجھے پتہ تھا عام حالات [...]

قاسم علی شاہ فاونڈیشن کے زیرِ اہتمام انٹرویو ۔ حسین قیصرانی

عزیزِ محترم اور معروف موٹیویشنل سپیکر قاسم علی شاہ  نے دعوت دی کہ میں اُن کی فاونڈیشن کا وزٹ کروں۔ شاہ جی کی خواہش پر میرا ایک مختصر انٹرویو بھی ریکارڈ کیا گیا جسے قاسم علی شاہ فاونڈیشن کے شکریہ کے ساتھ  شیئر کیا جا رہا ہے۔ YOUTUBE LINK   ٖFacebook Link: https://www.facebook.com/qasfound/videos/2274661655973144/      

By |November 26, 2019|Categories: videos|0 Comments

علاج سے بیٹے کی پڑھائی میں دلچسپی ۔ ایک ماں کے جذباتِ تشکر

۔۔۔۔۔ کل شام بھی بہت جوش میں تھا۔ اس وقت اس کے سر پر دھن سوار ہے کہ مجھے جلدی حفظ کرنا ہے۔ وہ اس بات کے لیے پریشان بھی ہے کہ اگر وہ ایسا نہ کر پایا تو سب کیا سوچیں گے۔ رات کو وہ اکیلا قرآن پاک پڑھتا رہا۔ آپ کو اندازہ نہیں ہو سکتا میں کیسا محسوس کر رہی ہوں۔ پہلی بار وہ پڑھنے کے بارے میں سوچ رہا ہے۔ آگے بڑھنا چاہتا ہے۔ مجھے سمجھ نہیں آرہی تھی کہ اللہ کا شکر کیسے ادا کروں ۔۔۔ میرے جیسے بندہ اور اتنا کرم ۔۔۔۔ بے شک میں اس قابل نہیں تھی۔ پھر کتنی دیر میں وہ الفاظ ڈھونڈتی رہی جن سے میں آپ کا شکریہ ادا کر سکوں۔ لیکن مجھے افسوس ہے کہ مجھے ایسے الفاظ نہیں ملے۔ یقیناً اللہ آپ کو اس کا بہت اچھا اجر دے گا۔ =================== حسین قیصرانی ۔ سائیکوتھراپسٹ & ہومیوپیتھک کنسلٹنٹ ۔ لاہور پاکستان فون نمبر 03002000210۔ ===================

علاج سے پہلے اور علاج کے بعد – سچی کہانی؛ ثمین کی اپنی زبانی

فرش پر بکھری ہوئی چیزیں سعد کو ثمین کی بگڑی حالت کا پتا دے رہی تھیں۔ اس نے نظر اٹھا کر ایک کونے میں سمٹ کر بیٹھی ہوئی ثمین کو دیکھا اور آہستہ سے چلتا ہوا اس کے قریب آ گیا اور اس کے پہلو میں بیٹھ گیا۔ اس نے اسے اپنی بانہوں میں بھر کر اپنے قریب کرنے کی کوشش کی لیکن وہ سٹپٹانے لگی اور خود کو اس کی گرفت سے آزاد کروانے کی کوشش کرنے لگی لیکن اس کی تمام تر کوششیں اور چیخیں سعد کی آہنی بازوؤں میں دم توڑ گئیں اور ہمیشہ کی طرح ہار کر اس نے اپنا سر سعد کے سینے پر ٹکا دیا۔ جب وہ اپنے اندر موجود تمام گرد و غبار آنسوؤں کی صورت میں نکال چکی تو سعد نرمی سے اس کا بازو سہلاتے ہوئے اس سے پوچھنے لگا۔ " کیا ہوا ہے؟" ثمین نے جواب دینے کی بجائے نفی میں سر ہلا دیا۔ سعد نے اس کے چہرے پر بکھرے والے بال ہاتھوں سے ہٹائے اور اس کے آنسو صاف کرتے ہوئے نرمی سے پوچھنے لگا۔ "ادھر دیکھو میری طرف، مجھے بتاؤ کیا بات ہے؟" وہ بدستور خاموش رہی۔ سعد نے اسے سہارا دے کر اٹھایا اور چلتا ہوا بیڈ کے کنارے تک لے آیا۔ اسے بیڈ پر بٹھا کر خود وہ گھٹنوں کے بل اس کے سامنے بیٹھ گیا۔ "ثمین I think you need a doctor.” ثمین نے بے یقینی سے اس کی طرف دیکھا اور دونوں ہاتھوں میں اپنا سر تھام کر بیٹھ گئی۔ " ڈاکٹر ۔۔۔۔۔ [...]

By |November 15, 2019|Categories: Homeopathic Awareness, Mental Health|0 Comments

My PMS is gone, Can’t believe try Dr. Hussain Kaisrani – A Review and Feedback

Pre-Menstrual Syndrome (PMS) is a very well known phenomenon almost every woman passes through. I have also been the victim of this PMS since last 8 years and by every passing year the occurrence and duration of the symptoms of PMS were getting a hype. Though PMS was having least effects on me physically but it was overwhelming me emotionally and mentally. It simply started with mild irritation and reached up to extreme anxiety and depression. Getting irritated and depressed, making shouts, crying for no reason, difficulty in sleep, laziness and severe mood swings a week before my periods are due became the part of my life. With the passage of time the anxiety and depression started staying longer even after the periods are done. My productivity and ability to think and remember in these days also was damaging many folds as well as overthinking and negative thinking were also common during these days. All these problems were making me feel like an unbearable person for those in surrounding me. The change in my mental condition also affected my menstrual cycle and I started facing problem like delayed periods, change in quantity and the texture of blood during my menses. I have accepted it as a part of my life until I started Homeopathic treatment from a Psychotherapist from Lahore, Dr. Hussain Kaisrani. After 3 months of treatment, that included Psychotherapy along with medicine, I felt a big change in me and my menstrual system. My menses improved in terms of [...]

By |November 15, 2019|Categories: Genitourinary, Homeopathic Awareness, Mental Health, Testimonials|0 Comments

An Amazing experience of Acne and Pimple Treatment by Hussain Kaisrani – A review and Feedback from PhD Scholar, China

My story of ailments is highly complicated, very ambiguous and too much confusing so I am not going into its detail. It’s beyond the understanding because no doctor even I myself couldn’t know what is happening inside me. It’s only my present healer, Dr Hussain Kaisrani, who not only listens and understands my problems rather presents the clear picture of my sufferings if I am not in the position to explain the condition. He is of its own kind Psychologist, Psychotherapist and Homeopathic Doctor. Being a science student and PhD researcher in China, my mindset was that, that the Homeopathic medicine is less research base and more a myth. But, one of my friend who himself is a renowned scientist and PhD doctor convinced me to contact a Homeopathic doctor Hussain Kaisrani. He shared his story with me that once he was completely out of his life. He was hopeless as doctors from Pakistan and abroad couldn’t resolve his issues after being hospitalised and treated for many months. He informed me that he got treatment from Doctor Kaisrani and now fully back in his life. He is now enjoying medicine free, happy, healthy and highly successful life. Upon his strong recommendations, I somehow prepared myself to contact the doctor. I informed him about all of my problems. My problems are so much and too many that one can write a PhD thesis on it. One day, I will get perfectly fine In Sha Allah and then I will share all [...]

By |November 5, 2019|Categories: Homeopathic Awareness, Skin and Hair, SOLVED CASES, Testimonials|0 Comments
Load More Posts