Best Homeopathic Medicine top Treatment by classical Homeopathic Doctors

Slide Slide Slide Slide
Dr hussain kaisrani

HUSSAIN KAISRANI

DHMS, BHMS (UoP), B.Sc. MS ST (University of Wales, UK)
MBA (TIU), MA (Philosophy, Urdu, Persian & Political Science).

Hussain Kaisrani (aka Ahmad Hussain) is a distinguished Psychotherapist & Chief Consultant at Homeopathic Consultancy, Lahore. He is highly knowledgeable, experienced and capable professional who regularly contributes to various publications and runs a widely read specialized blog on health issues. Mr. Hussain is one of the most sought after speakers at conferences and seminars on health and well being.

Mr. Hussain has a strong academic and professional background. Studied DHMS in Noor Memorial Homeopathic Medical College, Lahore.

Counter image
Hussain Kaisrani Opinion
Read Hussain Kaisrani's Point of views on various aspects of disease free healthy living
Counter image
Online Consultation
Consult with Hussain Kaisrani with full confidence from anywhere at your comfortable time.
Counter image
24/7 Services
If you are an existing patient and your monthly review is due then you can submit your health review here.

Hussain Kaisrani's Prospective

ایک سوال اور اُس کا جواب

01. کیا فیس کی تفصیل جاننے سے پہلے ہومیوپیتھک علاج کو سمجھنا ضروری ہے؟
ہومیوپیتھک علاج کے اپنے تقاضے ہیں۔ اس میں علامات یا بیماریاں مختصر انداز میں نہیں؛ بلکہ بہت لمبی تفصیل سے ڈاکٹر کو سمجھنی ہوتی ہیں۔ علامات اور تفصیل جتنی کم ہوں گی علاج کی کامیابی کے اِمکانات بھی اُتنے ہی کم ہوتے ہیں۔
02. ہومیوپیتھک اور ایلوپیتھک طریقہء علا ج میں کیا فرق ہے؟
علامات کی تفصیل لینے کو کیس ڈسکشن یا کیس لینا کہتے ہیں۔ فون پر یا ملاقات میں تیس چالیس منٹ کا انٹرویو ہوتا ہے۔ اُس کے بعد گھنٹہ بھر کی ریسرچ۔ پھر جا کر تین ہزار 3000 سے زائد دوائیوں میں سے کوئی ایک دوا منتخب ہوتی ہے جو (ہمیشہ کی نہیں بلکہ) صرف موجودہ یعنی سب سے اوپر کی سطح کے مسائل کو ٹھیک یا حل کرتی ہے۔ دس پندرہ دن بعد پھر یہ کاروائی (یعنی انٹرویو، سوال جواب بذریعہ فون یا ملاقات) دوبارہ ہوتی ہے اور نئی صورت حال کے مطابق پھر کوئی دوائی منتخب ہوتی ہے۔ یہ سلسلہ چلتا رہتا ہے تاآنکہ مریض سمجھتا ہے کہ اُس کی صحت بحال ہو چکی ہے اور مسائل حل ہو گئے ہیں یعنی اُس کے پاس بتانے کو کچھ نہیں رہتا
03. کیا ہومیوپیتھک میں ایک ہی مرتبہ دوائی کا فیصلہ کر لیا جاتا ہے؟
جی نہیں۔ اس میں ہر ماہ دو سے تین بار کیس کا تفصیلاً جائزہ لے کر دوائی کا فیصلہ کرنا ہوتا ہے تا کہ حسبِ ضرورت جب جتنی اور جیسی ضرورت ہو دوائی کی خوراکاور پوٹینسی (طاقت) میں تبدیلی کرنا اور رہنمائی کے لئے میرا دستیاب ہونا شامل ہے
04. فیس کے متعلق حتمی طور پر کب بتا یا جا سکتا ہے؟
فیس کے متعلق حتمی طور پر تو کیس ڈسکس کرنے کے بعد ہی کچھ کہا جا سکتا ہے، کیس لینے کے بعد ہی اندازہ لگ سکے گا کہ مریض کے علاج پر کتنی محنت،توجہ،توانائی اوردوائی لگے گی۔ ایک نارمل کیس کے علاج کی کم از کم فیس دس ہزار روپے ہے
05. کیا ڈاکٹر حسین قیصرانی پاکستان سے باہر بھی مریضوں کنسلٹنسی فراہم کرتے ہیں؟
جی ہاں ڈاکٹر حُسین قیصرانی پاکستان سے باہر بھی مریضوں کو کنسلٹنسی فراہم کرتے ہیں لیکن اُ سکے لئے ڈاکٹر صاحب سے اپائٹمنٹ لے کر واٹس ایپ کے ذریعے تیس سے چالیس منٹ تک کیس ڈسکس کیا جا سکتان ہے۔

For New Patients

New Patients Contact via Phone Number, Whatsapp, Email or Contact Form for an appointment

For Existing Patients

Existing Patients Contact via Phone Number, Whatsapp, Email or Contact Form for an appointment