ہومیوپیتھی اردو

September 2016

کان درد، بہنا، کان میں آوازیں، بہرہ پن، کھجلی، خارش ۔ ہومیوپیتھک دوائیں علاج ۔ حسین قیصرانی

By |2020-09-10T00:15:26+05:00September 9, 2016|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Infectious Diseases|Tags: , |

کان سماعت کا آلہ ہے جس کے ذریعے ہم سنتے ہیں۔ اِس کی بیماریوں میں بیرونی اور اندرونی خارش، کان درد، کان کا بہنا اور بہرہ پن خصوصی اہمیت کی حامل ہیں۔ کان کا درد سردی لگ جانے سے، نزلے کے مسائل یا ورم پیدا ہونے کی وجہ سے ہوتا ہے۔ اگر کوئی بچہ پیدائشی طور پر بہر ہ ہو تو وہ گونگا بھی ہو گا کیوں کہ بچہ بڑوں کی آواز سنتا نہیں اس لئے بولنے سے معذور رہ جاتا ہے۔ اس سے آپ یہ اندازہ بخوبی لگا سکتے ہیں کہ انسان کے تمام اعضاء کس طرح ایک دوسرے سے وابستہ ہیں۔ اِنسان کا جسم ایک مشین ہی کی طرح ہے جس کا ہر پرزہ ایک دوسرے سے وابستہ ہے۔ کسی ایک بھی پرزہ کے خراب ہونے سے ساری مشین متاثر ہو جاتی ہے۔ جس طرح مشین کے پرزے بدل لئے جاتے ہیں اسی طرح صحت مند انسان کے کچھ عضو دوسرے ضرورت مند انسانوں میں بھی لگائے جا رہے ہیں۔ میڈیکل سائنس کی یہ بہت بڑی خدمت ہے جس کی جتنی بھی تعریف کی جائے حق ادا نہ ہو گا۔ کان کی تکالیف اور ان کی ہومیوپیتھک دوائیں مندرجہ ذیل ہیں۔ کوئی بھی ہومیوپیتھی دوا لمبا عرصہ استعمال [...]

ذہنی، جذباتی اور نفسیاتی اُلجھنوں کا ہومیوپیتھک علاج — حسین قیصرانی

By |2018-12-28T16:59:01+05:00September 1, 2016|Categories: Children's Diseases, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health|Tags: , , |

حادثے، چوری ڈکیتی، فراڈ، اَغواء، ظلم و تشدد، بم دھماکے، قتل و غارت، بیماریاں، اچانک اَموات، عُریانی، بے حیائی، شہوت پرستی اور اِس طرح کے دیگر واقعات ہم ہر روز اخبارات، ٹی وی، انٹرنیٹ اور فیس بک وغیرہ پر پڑھتے دیکھتےہیں۔ ان حالات و واقعات کے ماحول میں رہنے والوں کے ذہنوں میں خوف، لالچ، طیش، غصہ، مایوسی، رنج و غم، شہوت اور اِنتقام جیسے جذبات کا غلبہ رہتا ہے تو یہ ایک فطری امر ہے۔ اس لئے پاکستانی معاشرے میں دورانِ علاج ذہنی علامات کو اتنی اہمیت نہیں دی جا سکتی جتنی ترقی یافتہ معاشروں میں۔ مثلاً برطانیہ اور یورپ میں علاج معالجہ کے حوالہ سے مشاہدہ کرنے کا موقع ملا تو اندازہ ہوا کہ وہاں کے ہومیوپیتھک ڈاکٹرز اپنی زیادہ توجہ ذہنی اور نفسیاتی مسائل و علامات پر دیتے ہیں۔ یہی وجہ ہے چوٹی کے تمام ہومیوپیتھک ڈاکٹرز کی کتب اور ریسرچ میں ذہنی علامات کو بڑی وضاحت و صراحت سے بیان کیا گیا ہے۔ اُن معاشروں میں پلے بڑھے لوگ نظام کے اندر رہنے کے اِس قدر عادی ہوتے ہیں کہ عملی زندگی میں تھوڑی سی بد نظمی اور خاندانی مسائل کی دگرگونی اُنہیں ہِلا کر رکھ دیتی ہے۔ اُن کے ذہنی، نفسیاتی اور معاشرتی مسائل گھمبیر، [...]

August 2016

ہومیوپیتھک ادویات کی اَفادیت: چند اِشارے

By |2016-08-25T07:20:31+05:00August 25, 2016|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|Tags: , , |

۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ہومیوپیتھک کی ایک ایک دوا پر کئی کئی کتابیں لکھی جا سکتی ہیں۔ میں آپ کو آرنیکا کی مثال دیتا ہوں۔ اگرچہ آرنیکا کوئی بہت بڑی دوا نہیں ہے لیکن آپ اس کی Efficacy دیکھیں تو حیران رہ جائیں۔ کہا جاتا ہے چوٹ لگنے پر آرنیکا نمبر ون دوا ہے اور یہ درست بھی ہے۔ آپ Easy and safe delivery میں آرنیکا کا کردار دیکھیں۔ Labour pains شروع ہونے پر حاملہ کو 1M کی ایک خوراک کھلا دیں۔ انشااللہ نارمل ڈیلیوری ہو گی۔ ایک خوراک ڈیلیوری کے بعد دے دیں ہر قسم کی پیچیدگی سے بچ جائیں گے۔ آنندہ زارن ایک مشہور امریکن گائناکالوجسٹ تھی۔ ستمبر 2008 میں روڈ سائیڈ ایکسیڈنٹ میں اس کا انتقال ہو گیا۔ اس کا کہنا تھا کہ اس نے چھ سو سے زیادہ ڈیلیوری کیس اٹینڈ کئے۔ سب میں آرنیکا استعمال کی اور ایک کیس بھی سیزیرین سیکشن کو ریفر نہیں کرنا پڑا۔ جی!  ایک کیس بھی نہیں۔ مریضہ کوسیزیرین سیکشن سے بچا کر آپ نے اس کو مالی نقصان سے بچایا ،نشتر زنی سے بچایا، پیچیدگی سے بچایا اور اپنا ممنون بھی کیا ۔ سنگل ریمیڈی پریکٹس کے فائدے بے شمار ہیں۔ میں آپ کو آرنیکا کی ایک اَور مثال دیتا [...]

February 2008

ہومیوپیتھک کیس ٹیکنگ میں مشاہدہ Body language

By |2017-08-17T11:51:53+05:00February 18, 2008|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|Tags: , , , , , |

باڈی لینگویج کیس ٹیکنگ میں مشاہدہ کی بہت اہمیت ہے۔ اس بات پر غور کریں کہ مریض کیا کرتا ہے اور کیا کہتا ہے۔ مثلاً باڈی لینگوئج  کو ہی لے لیں۔ برائی اونیا کا مریض بے حس و حرکت لیٹا ہو گا۔ سوالات کے جواب دینے سے گریز کرے گا۔ کالوسنتھ یا میگنیشیا فاس کا مریض ہو گا تو آگے کو دہرا ہوا ہو گا۔ جیلسی میم کا مریض ہو گا تو نقاہت اس کے انگ انگ سے پھوٹ رہی ہو گی۔ شکایت کوئی بھی ہو اگر علامات میں نقاہت بھاری ہو تو جیلسی میم کو کبھی نہ بھولیں۔ نکس وامیکا کا بیوروکریٹک رویہ آپ محسوس کریں گے۔ علامات بیان کرے گا تو انتہائی نفاست اور ترتیب سے۔  نکس وامیکا اور آورم میٹ کا اندازِ حکمرانی نمایاں ہوتا ہے۔ آپ نے دیکھا ہو گا بعض مریض کلینک میں آکر بیٹھ جائیں گے اور جب تک آپ اُن سے مخاطب نہ ہوں وہ بات چیت میں پہل نہیں کرتے۔ مثلاً نیٹرم میور، آورم میٹ، برائٹا کارب، برائی اونیا، سیپیا، سلیشیا وغیرہ۔ لیکن آرسینکم ایلبم اور ارجنٹم نائیٹریکم سے نچلا نہیں بیٹھا جاتا۔ ویٹنگ روم میں بیٹھے کئی بار اٹھ  کر ڈاکٹر کے کمرے میں جھانکنے کی کوشش کریں گے۔ جبکہ بعض [...]

September 2006

بیلاڈونا Belladonna

By |2016-11-25T18:53:44+05:00September 28, 2006|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|Tags: , , , , , , |

  بیلاڈونا  Belladonna اس دوا کا زیادہ تر اثر دموی اورصفراوی مزاج والے مریضوں پر ہوتا ہے۔ ایسے مریض بحالتِ صحت خوش مزاج اور ہنس مُکھ  ہوا کرتے ہیں  لیکن جب بیمار ہوں تو وہ تند مزاج ہو جاتے ہیں اور اکثر ہذیان میں مبتلا ہو جاتے ہیں۔ ان کو تشنج کا ڈر لگا رہتا ہے۔ ایسے مریض ہوا کے جھونکے سے ڈر جاتے ہیں اور کھلی ہوا میں بیٹھنے اور سر کے بال کٹوانے سے ان کو فوراً سردی لگ جاتی ہے۔ دردیں فوراً ہی تیز ہو جاتی ہیں اور پھر اسی تیزی سے معدوم بھی ہوجاتی ہیں یعنی دردیں تھوڑی دیر رہا کرتی ہیں۔ چہرہ سرخ، آنکھیں سرخ، آنکھیں ٹکٹکی باندھے ہوئے اور پُتلیاں پھیلی ہوئی ہوتی ہیں۔ سر کی جانب خون پہچانے والی شریان کیروٹڈ آرٹریر (Carotid Arteries) خوب بھر کر چلتی ہے اور خوب تڑپتی ہے۔  لعاب دار جھلیاں خشک ہوتی ہیں۔ جب اعصاب حسی و حرکتی دونوں میں اکساہٹ بدرجہ کمال ہو، اعصاب حرکتی میں نقص ہونے کے باعث جھٹکاتے ہو اور بےچینی ہو تو یہ دوا مؤثر ہوا کرتی ہے۔ جب دماغ کی شریانوں میں خون بھر جائے تو یہ دوا بہت مفید ثابت ہوتی ہے۔ تمازت آفتاب کے باعث جب سر میں خون کا اجتماع [...]

ایلیم سیپا – اردو ہومیوپیتھی Allium Cepa

By |2016-11-25T18:39:28+05:00September 11, 2006|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Uncategorized|Tags: , , , , , , |

  ایلیم سیپا Allium Cepa دنیاۓ ہومیوپیتھی میں ڈاکٹر ولیم بورک کی کثیر المطالعہ تصنیف " بورک میٹریا میڈیکا " کلیدی حیثیت رکھتی ہے جس کے انگریزی میں کئی ایڈیشن شائع ہو چکے ہیں اور یہ دوا میٹریا میڈ یکا میں (22) نمبر پر ہے۔ ایلیم سیپا شدید نزلہ زکام میں کام آتی ہے جبکہ ناک سے بہت جلندار پانی کی طرح مواد  نکلتا ہو اور آنکھوں سے سادہ آنسو خارج ہوتے ہوں۔ ناک کے مسوں میں یہ دوا مفید ہوتی ہے۔ جو پانی کی طرح کا مواد ناک سے بہتا ہو وہ اوپر والے ہونٹ پر جلن کا باعث بنتا ہو اوراس سے ہونٹ سرخ ہو جاتا ہو اور درد کرتا ہو۔ آشوب چشم: شدید آشوب چشم میں بھی یہ دوا مظہر ہوا کرتی ہے جبکہ آنکھوں سے صاف اور سادہ آنسو خارج ہوتے ہوں جن میں خراش پیدا کرنے والا مادہ نہ ہو۔ کھانسی: جب زکام کا اثر حلق تک چلا جائے، خشک کھانسی حلق میں خراش کی وجہ سے پیدا ہو، کھانسی نہایت شدید اور تکلیف دہ ہو، کھانسی اتنی شدید ہو کہ مریض حلق کو پکڑے رکھتا ہو اور ساتھ ہی آنکھوں سے پانی بہتا ہو تو یہ دوا کارآمد ہوتی ہے۔ سر درد کو ایام حیض میں آرام [...]

August 2006

مرض اور ہومیوپیتھی

By |2016-11-25T18:38:41+05:00August 23, 2006|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|Tags: , , , , , , , |

ڈاکٹر ہانیمین نے اپنی شہرۂ آفاق تصنیف آرگنن آف ہومیوپیتھک میں مرض کے متعلق لکھا کہ جسم انسانی کے کسی خاص اعضاء یا متعدد اعضاء کی نارمل کارکردگی میں کوئی نقص پیدا ہو جانا مرض کہلاتا ہے۔ جب بھی جسم کے اندر کوئی نقص پیدا ہوتا ہے تو جسم کی اپنی قوت حیات (ایمیونٹی سسٹم) اس کے خلاف اٹھ کھڑی ہوتی ہے۔ وہ  مرض کو جسم سے باہر پھینکنے کی ہر ممکن کوشش کرتی ہے۔ اگر مرض زیادہ طاقت ور ہو  قوت حیات دب کر رہ جاتی ہے۔ مرض  قوت حیات  اور سارے جسم پر قابض ہو جاتا ہے۔ جسم کو مرض سے پاک کرنے کے لیے قوت حیات (وائٹل فورس) کو طاقت ور بنانا بہت ضروری ہو جاتا ہے۔ اب کسی بیرونی شے  (میڈیسن)  کی مدد یعنی استعمال سے قوت حیات کو طاقتور بنایا جاتا ہے تاکہ مرض کا خاتمہ کیا جا سکے۔