11 07, 2021

Treating Covid-19 symptoms with homeopathic Medicines – Feedback / Review

By |2021-07-11T13:15:30+05:00July 11, 2021|Categories: Respiratory, Testimonials|0 Comments

All it started with sneezing at night but till morning it turned to extreme flu. As the day crept in to the evening my ribs started hurting with pain in left lung and swelling. It was quite manageable till then but later on it became harder for me to breathe. Within less than twenty-four hours I was down with extreme flow of flu and pain in my whole body with feeling of burning. At this hour an alarm beeped inside my mind showing me the possible dangers I may have in future. I realized that I must contact to my doctor without any further delay and it was a wise decision by my side to contact my Homeopathic physician, Dr. Hussain Kaisrani, whom I believe the most in case of any medical emergency. As per my expectations, I was suspected being infected by CORONA. Dr. Kaisrani after knowing about severity of my condition immediately asked me to isolate and started homeopathy treatment for the very next moment but before I could take precautions my husband had already been hit by the virus. The delay I had already made while contacting my doctor may could end in a regret if he [...]

18 04, 2021

سانس کی تکلیفیں، مستقل نزلہ زکام کھانسی اور زندگی سے مایوسی – ہومیوپیتھک دوائیں، علاج اور کیس – حسین قیصرانی

By |2021-06-07T00:49:55+05:00April 18, 2021|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Respiratory, SOLVED CASES, Testimonials|0 Comments

کوئی ڈیڑھ ماہ پہلے کراچی سے ایک ڈاکٹر صاحبہ نے اپنے علاج کے لئے بذریعہ فون رابطہ فرمایا۔ یوں تو وہ بے شمار قسم کے مسائل کا شکار تھیں لیکن جو معاملات اُن کے لئے وبالِ جان تھے اُن کی فہرست کچھ یہ ہے: وہ اپنی صحت بلکہ یہ کہنا چاہئے کہ زندگی سے مایوس تھیں۔ ہر طرح کی دوائیاں بے دریغ استعمال کر چکی تھیں اور گذشتہ کچھ عرصہ سے ہومیوپیتھک پر مکمل انحصار تھا۔ انجیکشنز اور انٹی بائیوٹکس سے مایوس تھیں اگرچہ فیملی کا اِس پر بے حد اصرار جاری تھا۔ صحت کی خرابی کے باعث اپنا کلینک اور پریکٹس تقریباً ختم کر چکی تھیں۔ دن رات نزلہ زکام کی کیفیت، شدید بلغمی کھانسی، چھینکیں اور سانس بند ہونے کا شکار تھیں۔ سینہ ایسا بھاری جیسے بلغم سے بھرا پڑا ہو۔ ہر وقت ناک صاف کرنا زندگی کا اہم ترین کام رہ گیا تھا۔ دل کرتا تھا کہ کھل کر سانس میسر آ سکے۔ آواز بھی اب واضح نہیں رہی تھی۔ بلغم گہرے پیلے اور سبز رنگ کا تھا اور چپکنے والا بھی۔ اور اب یہ منہ میں آنے لگ گیا تھا۔ کھانسی اتنی شدت سے آتی کہ پیشاب کے قطرے اکثر نکل جاتے۔ ہونٹ خشک ہو چکے [...]

15 11, 2020

صحت و سلامتی کی طرف واپسی – الحمد للہ – حسین قیصرانی

By |2020-11-15T13:00:31+05:00November 15, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Respiratory|0 Comments

اکتوبر کا مہینہ تعلیمی سرگرمیوں اور کچھ سیر و تفریح کی وجہ سے مسلسل سفر میں گزرا۔ اس دوران میں بے شمار لوگوں سے ملنا ملانا بھی رہا۔ سخت سردی بلکہ برف باری میں وقت گزرا تو کہیں پسینہ سے شرابور کیفیت سے دوچار رہے۔ کہیں کرونا کے اثرات کی گونج رہی تو کہیں جیسے اس کی کچھ خبر ہی نہیں تھی۔ اس بھاگ دوڑ، میل ملاپ اور دعوتوں خدمتوں میں کچھ ایسا ہوا کہ جو عام نزلہ زکام، کھانسی، گلا خرابی، مسلسل چھینکوں، سردی وغیرہ سے زیادہ اور مختلف تھا۔ خود کو الگ تھلگ کرنے تک گھر کے افراد میں بھی ایسی ہی کیفیات نمودار ہونا شروع ہو گئیں۔ اللہ کا کرم ہوا کہ علاج کے دو تین دن بعد ہی سے دوسرے افراد نارمل ہو گئے۔ اپنے آپ کو علیحدہ کر لیا ہوا تھا۔ پروردگار کے کرم، فیملی کی خوب خاطرداری اور اپنے علاج سے اگرچہ صورتِ حال مکمل کنٹرول ہو گئی تاہم اپنا علاج میرے اپنے لئے کوئی خاص مفید نہ ہو پا رہا تھا۔ میرا خیال تھا کہ یہ ایسے ہی چلے گا اور ہفتہ دس دن بعد ہی واضح بہتری کا امکان ہو سکے گا۔ اس دوران ڈاکٹر بشرہ خان صاحبہ نے کسی حوالہ سے [...]

22 04, 2020

موٹاپا ۔ 35 کلوگرام وزن کم ۔۔ شوگر، بلڈ پریشر، پینک اٹیک، انگزائٹی، شدید کھانسی اور معدہ خرابی مکمل کنٹرول ۔ کامیاب کیس، دوا اور علاج ۔ حسین قیصرانی

By |2020-04-24T19:45:16+05:00April 22, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, Respiratory, SOLVED CASES|Tags: |0 Comments

اٹک کے رہائشی، دو بچوں کے والد، چالیس سالہ احمد زمان (مریض کی خواہش پر نام دیا جا رہا ہے)، پیشے کے لحاظ سے معلم ہیں۔ جاسوسی کہانیاں پڑھنے کے شوقین ہیں۔ موٹاپے کی وجہ سے بہت پریشان تھے۔ پہلے بھی ہومیوپیتھک علاج (Homeopathic Treatment) کروا چکے تھے لیکن کوئی خاطر خواہ فائدہ نہیں ہوا تھا۔ ویب سائٹ پر کیسز پڑھنے کے بعد رابطہ کیا۔ ان کے مطابق، سب سے بڑا مسئلہ بڑھتا ہوا وزن تھا جو کسی بھی طرح کنٹرول نہیں ہو رہا تھا۔ مستقل خشک کھانسی نے بھی تنگ کر رکھا تھا۔ معدہ اکثر خراب رہتا تھا۔ ساتھ ہی انزائٹی (Anxiety) اور پینک اٹیک (Panic Attack) بھی ہوتے تھے۔ گھنٹہ بھر تفصیلی انٹرویو کے بعد اور اگلے چند سیشن میں یہ مسائل بھی سامنے آئے۔ 1 ۔بھوک بہت شدید (extreme hunger) لگتی تھی۔ شدت کا ندیدہ پن (pinched for food) رہتا تھا اور کبھی بھوک مٹنے کا احساس نہیں ہوتا تھا۔ کھانے پر درندوں کی طرح ٹوٹ پڑنے کی عادت تھی۔ بڑے بڑے نوالے بغیر زیادہ چبائے نگل لیتے تھے۔ کافی مقدار میں کھانے (over eating) کے باوجود پیٹ نہیں بھرتا تھا۔ روزے نہیں رکھ پاتے تھے۔ 2۔سستی  (laziness) بہت زیادہ رہتی تھی۔ کسی کام کو دل نہیں کرتا تھا۔ ایک کلومیٹر کے فاصلے پر بھی بائیک [...]

4 02, 2020

کراچی سے آن لائن علاج کا تجربہ ۔ محمد حماد شیخ

By |2021-01-29T14:23:17+05:00February 4, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, Respiratory, Testimonials|0 Comments

میں محمد حماد شیخ کراچی کا رہائشی ہوں۔ میں، میری وائف اور تین بچے مستقل طور پر ایلوپیتھک دواؤں پر زندگی گزار رہے تھے۔ آئے روز نت نئے مسائل کا شکار تھے۔ مسائل تھے کہ بڑھتے ہی جاتے تھے اور ایلوپیتھک ڈاکٹرز بھی بہت آزمائے جا چکے تھے۔ ایک دن اتفاقی طور پر میں ڈاکٹر احمد حسین قیصرانی صاحب کے آفس میں تھا اور ڈاکٹر صاحب کسی مریض کو فون پر دوا بتا رہے تھے۔ اس سے مجھے پتہ لگا کہ ڈاکٹر صاحب ایک بہت ہی ماہر ہومیوپیتھ ہونے کے ساتھ ساتھ سائیکوتھراپسٹ (Psychotherapist) بھی ہیں۔۔۔ وہ دن میری زندگی کا ایک خوبصورت دن تھا کہ اس دن میری ملاقات ایک نہایت قابل، انرجیٹک، موٹیویشنل اور کیئرنگ ڈاکٹر احمد حسین قیصرانی صاحب سے ہوئی اور پھر میری زندگی نے ایک نیا موڑ لیا جس کے لئے میں اللہ کے بعد ڈاکٹر صاحب کا ہمیشہ ممنون رہوں گا۔ اللہ تعالی ڈاکٹر صاحب کو ہمیشہ خوش و خرم رکھیں۔ آمین!میری وائف کافی عرصہ سے مستقل طور پر ماہر نفسیات ڈاکٹر (Top  Psychologist  /  Best  Psychiatrist) کی دوائیں لے رہی تھیں۔ انہیں ٹینشن (Tension / Stress)، ڈپریشن(Depression)، انزائٹی (Anxiety)، فوبیاز (Fear  and  Phobia)، معدہ میں تیزابیت  ایسڈیٹی (Acidity)، قبض (Constipation)، نیند نہ آنا [...]

22 01, 2020

سانس کی شدید تنگی، دم گھٹنا، نیند کے مسائل اور مستقل غصہ ۔ کامیاب علاج اور دوائیں ۔ حسین قیصرانی

By |2020-02-16T15:02:08+05:00January 22, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, Respiratory, SOLVED CASES|0 Comments

چھ ماہ پہلے تیس سالہ مسز ایچ نے ناٹنگھم برطانیہ (Nottingham, UK) سے کال کی۔ محترمہ تین بچوں کی والدہ ہیں اور پچھلے دس سال سے برطانیہ میں مقیم ہے۔ تفصیلی گفتگو سے پتہ چلا کہ ان کا تعلق اسلام آباد (پاکستان) کے اعلیٰ تعلیم یافتہ خاندان سے ہے۔ اپنی ایک فیملی فرینڈ کے پر زور اصرار پر مجھ سے رابطہ کیا۔ ان کے مسائل وہاں کے ڈاکٹرز کے لیے نا قابلِ فہم بھی تھے اور نا قابلِ علاج بھی۔ وہ اچانک سانس کی شدید تکلیف میں مبتلا ہو گئی تھیں۔ حالاں کہ صرف چند ماہ پہلے تک وہ بہت اچھی صحت کی حامل تھیں۔ سالوں سے انہیں کسی ڈاکٹر یا باقاعدہ دوائی لینے کی ضرورت محسوس ہی نہ ہوئی تھی لیکن جس تکلیف نے ان کی روزمرّہ زندگی کو مشکل بنا دیا وہ سانس لینے میں رکاوٹ کا شدید احساس تھا۔ یہ مسئلہ اس قدر شدت اختیار کر رہا تھا کہ ان کے لیے کھانا اور بات کرنا بھی مشکل ہو گیا تھا۔ کیس دیتے وقت بھی اُن کو سانس بُری طرح رک رہی تھی۔ اس لیے محترمہ نے نیشنل ہیلتھ سروس (NHS) سے چیک اپ کروانے کا فیصلہ کیا۔ کئی لیبارٹری ٹیسٹ (Laboratory Test) ہوئے مگر جب کچھ [...]

20 01, 2020

مستقل سانس پھولنا، دم گھٹنا، پینک اٹیک، شدید غصہ، انگزائٹی اور نیند کے مسائل ۔ انگلینڈ سے فیڈبیک

By |2021-01-30T09:13:34+05:00January 20, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, Respiratory, Testimonials|0 Comments

میں نے ایک فیملی فرینڈ کے کہنے پر ڈاکٹر حسین قیصرانی سے رابطہ کیا۔ میری طبیعت بہت خراب تھی۔ سانس کی تکلیف اتنی بڑھ چکی تھی کہ میرے لیے ڈاکٹر صاحب سے بات کرنا بھی مشکل تھا۔ لیکن حیرت انگیز بات یہ تھی کہ ڈاکٹر صاحب سے بات کرنے کے دوران مجھے اپنی طبیعت میں بہتری محسوس ہوئی۔ مجھے لگا کہ وہ میری بات کو میرے نقطہ نظر کے مطابق سمجھ رہے ہیں۔ بات کرنے کے دوران میری سانس پھول رہی تھی لیکن ڈاکٹر صاحب نے بیزاری کا کوئی تاثر نہیں دیا۔ انہوں نے میری بات نہایت توجہ اور شفقت سے سنی۔ میں نے اپنی کیفیات کو تفصیل سے بیان کیا۔ اور اس طرح میرا علاج شروع ہوا۔ دوائی کے ساتھ میری سائیکوتھراپی (Psychotherapy) بھی جاری رہی۔ میں نے انھیں علاج کے سلسلے میں بہت فرض شناس پایا۔ انگلینڈ اور پاکستان کی ٹائمنگ میں بہت فرق ہے لیکن ٹائمنگ کا فرق بھی ڈاکٹر صاحب سے رابطہ پر کبھی اثر انداز نہیں ہوا۔ دن ہو یا رات مجھے جب بھی ضرورت محسوس ہوئی، ڈاکٹر صاحب کو میسر پایا۔ ان کا طریقہ علاج بے حد قابلِ تعریف ہے۔ میرے بہت ہی الجھے ہوئے مسائل کو بہت ٹیکنیکل انداز میں حل کیا۔ میری [...]

18 08, 2019

آن لائن ہومیوپیتھک علاج ایک دلچسپ تجربہ – رائنہ ضیا

By |2019-08-18T22:48:22+05:00August 18, 2019|Categories: Children's Diseases, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Respiratory, Testimonials|2 Comments

(کمپوزنگ اور رواں اردو ترجمہ: مہرالنسا) ہومیوپیتھک طریقہ علاج میرے لیے نیا اور انوکھا بالکل بھی نہیں تھا۔ میں پاکستان کے بہت سے مشہور ہومیوپیتھک ڈاکٹرز سے مل چکی تھی لیکن ڈاکٹر حسین قیصرانی کا کام جذبے، لگن اور محنت سے بھرپور ہے اور انہوں نے بلاشبہ ہومیوپیتھی کے معیار کو بلند کرنے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ مجھے یاد ہے میں نے کئی بار اپنے بچوں کے چھوٹے چھوٹے مسائل اور علامات کے بارے میں بات کرنے کے لیے ڈاکٹر صاحب کو کال کی لیکن وہ ہمیشہ کہتے یہ علامات میرے لیے چھوٹی نہیں بلکہ بہت ہی اہم ہیں۔ میرے بیٹے کو گلے کے غدود Throat Infection کا مسئلہ تھا کبھی کبھی تکلیف اتنی شدید ہو جاتی کہ غدود سے خون رسنے لگتا دوسرے ڈاکٹرز نے مجھے کہا کہ بیٹے کو جوس، آئس کریم، کیچپ، مائیونیز اور بیکری کی بنی ہوئی اشیاء سے مکمل پرہیز کروانا ہے۔ میرے لیے اگرچہ یہ ناممکن تھا کیونکہ بچے یہی سب چیزیں ہی تو شوق سے کھاتے ہیں۔ بیٹے کی صحت کی خاطر اس کی پسندیدہ چیزیں بھی روکنا پڑیں۔ میرے بیٹے کے گلے کا انفیکشن، خواہ کتنی ہی جلدی دوبارہ ظاہر ہو جاتا، ایلوپیتھک ڈاکٹرز اسے اینٹی بائیوٹکس (Antibiotics) تجویز کرتے [...]

5 05, 2019

الرجی، سانس رکنا، کھانسی، چھینکیں، ناک کان آنکھوں میں خارش، دم گھٹنا – ڈاکٹر صاحب کا فیڈبیک

By |2019-05-06T17:30:21+05:00May 5, 2019|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Respiratory, Testimonials|0 Comments

اسلام علیکم سر سر! میں ایک ماہ کے علاج سے اپنے آپ کو کافی بہتر محسوس کر رہا ہوں۔ گرد و غبار سے الرجی (Allergy)، سانس رکنا، کھانسی، چھینکیں، ناک کان آنکھوں میں خارش کافی بہتر ہے۔ وہ ہر وقت ٹشو اور رومال ہاتھ میں رکھنا جس سے میں کافی تنگ تھا تقریباً چھوٹ گیا ہے۔ ۔ یاد داشت گو کہ مکمل بہتر نہیں ہوئی لیکن پہلے سے کافی بہتر ہے۔ ہر کام جلدی جلدی کرنا اور غلط کر دینا اور بھول جانا بھی کافی بہتر ہے۔ جریان کی تکالیف جو اکثر رہتی تھی وہ بھی کافی کم ہو گئی ہے۔ ابھی تکلیف باقی ہے مگر اب کبھی کبھار ہوتی ہے۔ بارش ہونے پر یا میرے سوئے ہوئے بارش شروع ہو جاتی تھی تو کھانسی اور دم گھٹنے کے دورے جاری ہو جاتے تھے۔ اب کھانسی کے دورے اور دم گھٹنے کی کیفیت بھی ختم ہو گئی ہیں۔ ساون کے موسم میں آکسیجن کی کمی ہوتی ہے اور میری تمام تکالیف میں اضافہ ہو جاتا ہے۔ اور ایک مدت گزر گئی ہے ساون کی بارشوں میں نہائے ہوئے اور ساون کی بارشوں میں نہانا بہت اچھا لگتا ہے لیکن اس تکلیف کی وجہ سے نہیں نہا سکتا تھا۔ لیکن اس [...]

23 01, 2019

ہائی پوٹینسی کے بارے میں میرے نظریات – ڈاکٹر ڈروتھی شیفرڈ – ترجمہ ڈاکٹر بنارس خان اعوان

By |2019-01-23T13:09:30+05:00January 23, 2019|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Professional, Respiratory|0 Comments

میں بچپن سے ہی ہومیوپیتھ ہوں کیونکہ میری والدہ ہومیوپیتھک ادویات سے ہی صحت یاب ہوئی تھیں۔ جب ایلوپیتھک ڈاکٹرز نے ان کا علاج کرنے سے ہاتھ اٹھا دیئے تو انہوں نے ہومیوپیتھک علاج کرایا اور جلد ہی چیچک جیسے موذی مرض سے نجات حاصل کر لی۔ ان کی صحت یابی کے چند روز بعد ہی میری پیدائش ہوئی تھی۔ چونکہ میں شروع سے ہی ہومیوپیتھک گھرانے سے تعلق رکھتی تھی اس لیے میری خوش قسمتی تھی کہ میں ایلوپیتھک دواؤں سے دور ہی رہی تھی۔ جب میں میڈیکل کی طالبہ تھی تو ہومیوپیتھک کے نظریات میرے لیے غیر واضح تھے اور نئے حاصل کردہ علم کے مطابق میری سوچ غلط تھی کیونکہ میں ہومیوپیتھی کی چھوٹی گولیوں کو حقیر سمجھتی تھی اور میرا نظریہ ہی تھا کہ یہ صرف بچوں کی چھوٹی اور سادہ شکایات کے لئے بہتر ہو سکتی ہیں لیکن مجھے اپنی اس سوچ کے غلط ہونے کا اندازہ اس وقت ہوا جب ایک دن میرے ہاتھ پہ شہد کی مکھی نے کاٹا اور اس کی وجہ سے میرے بازو تک سوجن پھیل گئی اور مجھے شدید درد محسوس ہو رہا تھا۔ میری والدہ نے مجھے ایپس (Apis) لینے کو کہا۔ تکلیف چونکہ بہت شدید تھی اور [...]