Homeopathy in Urdu

June 2020

حسین قیصرانی سے آن لائن علاج ۔ ایک بہت بڑی سہولت ۔ گوگل ریویو

By |2020-09-06T21:27:51+05:00June 22, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Testimonials|

ہمارے ہاں آن لائن علاج بہت زیادہ عام نہیں ہے۔۔۔ عام آدمی ابھی بھی اس سے ناآشنا ہے لیکن اس کی افادیت سے انکار بھی ممکن نہیں۔ ایک سال قبل سوشل میڈیا پر ہومیوپیتھک کنسلٹنٹ ڈاکٹر حسین قیصرانی صاحب کے کیسز کا مطالعہ کرنے کے بعد، میں نے بھی ڈاکٹر صاحب سے آن لائن علاج کا فیصلہ کیا۔ بلا شبہ یہ ایک شاندار تجربہ رہا ۔۔۔ اس سے پہلے علاج کبھی اس قدر سہل نہ تھا۔ کیا ہم کبھی تصور کر سکتے ہیں کہ ہمیں کسی اسپیشلسٹ سے ٹائم نہیں لینا، بے ہنگم ٹریفک سے الجھ کر ہاسپٹل نہیں جانا، کلینک پر اپنی باری کا انتظار نہیں کرنا، پھر فارمیسی کے چکر نہیں لگانے، ڈھیروں اینٹی بائیوٹک نہیں کھانی، بلا ضرورت اللہ کی نعمتوں سے پرہیز نہیں کرنا۔۔ یقیناً یہ سب ناممکن لگتا ہے۔ مگر آج میں ایسی ہی زندگی گزار رہی ہوں۔۔ میں اور میری فیملی پچھلے ڈیڑھ سال سے ڈاکٹر صاحب سے منسلک ہیں۔۔ اور صحت کے حوالے سے ہم نے بہترین وقت گزارا ہے۔ یہ علاج ہر لحاظ سے سود مند رہا۔ چیدہ چیدہ خصائص میں سر فہرست رازداری، علاج میں دلچسپی، پیچیدہ مسائل کو تکنیکی انداز میں حل کرنا، ایمرجنسی معاملات کو ترجیحی بنیادوں پر دیکھنے [...]

May 2020

کمزور لاغر جسم، پچکے گال، معدہ خرابی، شدید غصہ، انگزائٹی، ڈپریشن ۔ کامیاب کیس، دوا اور علاج ۔ حسین قیصرانی

By |2020-12-31T16:44:03+05:00May 3, 2020|Categories: Digestive System, Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES|Tags: |

ساری تیاریاں مکمل تھیں۔ دعوت نامے تقسیم ہو چکے تھے۔ وہ خاصا مطمئن تھا۔ آج اس کی بہن کی مہندی تھی۔ یہ ایک بڑی ذمہ داری تھی اور وہ پُر اعتماد تھا۔ اسے ایک بھائی ہونے کے ساتھ ساتھ باپ کا کردار بھی نبھانا تھا۔ جہیز کا سامان جا چکا تھا۔ بارات کے استقبال سے لے کر پُرتکلف دعوت اور رخصتی تک، سارے انتظامات ہو چکے تھے۔ کالج چھوڑنے کے بعد سے لے کر اب تک کا سارا سفر اس کی نگاہوں کے سامنے گھوم رہا تھا۔ یہاں تک آنے کے لیے اس نے بہت محنت کی تھی۔ وہ انہی سوچوں میں گم تھا جب فون کی بیل اسے خیالوں کی دنیا سے واپس لے آئی۔ موبائل کی سکرین پر دلہے کے والد کا نمبر تھا۔ شور سے بچنے کے لیے وہ گھر سے باہر نکل گیا تاکہ تسلی سے بات ہو سکے۔ لیکن اگلے ہی لمحے اس پیروں کے نیچے زمین تھی نہ سر پہ آسمان ۔۔۔۔۔۔! مسٹر X نے ساہیوال سے کال کی اور بتایا کہ ان کی عمر 23 سال ہے۔ وہ ایک بزنس مین ہونے کے ساتھ ساتھ درمیانے درجے کے زمیندار بھی ہیں۔ پچھلے دو سال سے ہومیوپیتھک ادویات اور آن لائن علاج کے حوالے [...]

April 2020

ہڈیوں کے امراض ۔ ہومیوپیتھک دوا اور علاج ۔ حسین قیصرانی

By |2020-05-12T01:13:14+05:00April 29, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Muscles, Ligaments, Tendons and Bones|

ہڈیوں کی عام تکلیفیں مندرجہ ذیل ہیں: ہڈیوں کی پرورش کا ناقص ہونا ہڈیوں کا ٹیڑھا ہونا ہڈیوں کا بڑھ جانا ہڈیوں کا بوسیدہ ہو جانا ہڈیوں کا نرم ہو جانا ہڈیوں کی ورمی کیفیات ہڈیوں کا درد ہڈیوں کی ٹی بی ہڈیوں کا کینسر یا سرطان ہڈیوں کے امراض کے بے شمار اسباب میڈیکل لٹریچر میں بیان کئے گئے ہیں۔ علاج کے لئے دوائیں بھی دستیاب ہیں اور سرجری آپریشن بھی بہت زیادہ ہو رہے ہیں لیکن، سوائے حادثات اور بیرونی چوٹوں کے، بہت کم ایسا ہوتا ہے کہ علاج مستقل اور کامیاب ہو۔ ہڈیوں کے اکثر امراض موروثی مزاج کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں۔ فیملی ہسٹری میں سفلس، ٹی بی یا کینسر کا ہونا پایا جاتا ہے۔ آتشک یعنی سفلس سب سے زیادہ اہم وجہ ہے۔ مریض کی ذاتی ہسٹری، مزاج اور فیملی ہسٹری کو خوب اچھی طرح سمجھ کر ضروری ہومیوپیتھک نوزوڈز استعمال کروانا بے پناہ اچھے نتائج دیتا ہے۔ اِن نوسوڈز کو ضرورت کے مطابق مگر لمبے وقفے سے دینا درد، تکلیفوں کے ساتھ ساتھ ہڈیوں میں جاری خرابی کو کنٹرول کر لیتا ہے۔ علامات کے مطابق باقی دوائیوں کی بھی بہت اہمیت ہے۔ ہڈیوں کے امراض کے مستقل علاج کے لئے مریض کا تفصیلی [...]

موٹاپا ۔ 35 کلوگرام وزن کم ۔۔ شوگر، بلڈ پریشر، پینک اٹیک، انگزائٹی، شدید کھانسی اور معدہ خرابی مکمل کنٹرول ۔ کامیاب کیس، دوا اور علاج ۔ حسین قیصرانی

By |2020-04-24T19:45:16+05:00April 22, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Mental Health, Respiratory, SOLVED CASES|Tags: |

اٹک کے رہائشی، دو بچوں کے والد، چالیس سالہ احمد زمان (مریض کی خواہش پر نام دیا جا رہا ہے)، پیشے کے لحاظ سے معلم ہیں۔ جاسوسی کہانیاں پڑھنے کے شوقین ہیں۔ موٹاپے کی وجہ سے بہت پریشان تھے۔ پہلے بھی ہومیوپیتھک علاج (Homeopathic Treatment) کروا چکے تھے لیکن کوئی خاطر خواہ فائدہ نہیں ہوا تھا۔ ویب سائٹ پر کیسز پڑھنے کے بعد رابطہ کیا۔ ان کے مطابق، سب سے بڑا مسئلہ بڑھتا ہوا وزن تھا جو کسی بھی طرح کنٹرول نہیں ہو رہا تھا۔ مستقل خشک کھانسی نے بھی تنگ کر رکھا تھا۔ معدہ اکثر خراب رہتا تھا۔ ساتھ ہی انزائٹی (Anxiety) اور پینک اٹیک (Panic Attack) بھی ہوتے تھے۔ گھنٹہ بھر تفصیلی انٹرویو کے بعد اور اگلے چند سیشن میں یہ مسائل بھی سامنے آئے۔ 1 ۔بھوک بہت شدید (extreme hunger) لگتی تھی۔ شدت کا ندیدہ پن (pinched for food) رہتا تھا اور کبھی بھوک مٹنے کا احساس نہیں ہوتا تھا۔ کھانے پر درندوں کی طرح ٹوٹ پڑنے کی عادت تھی۔ بڑے بڑے نوالے بغیر زیادہ چبائے نگل لیتے تھے۔ کافی مقدار میں کھانے (over eating) کے باوجود پیٹ نہیں بھرتا تھا۔ روزے نہیں رکھ پاتے تھے۔ 2۔سستی  (laziness) بہت زیادہ رہتی تھی۔ کسی کام کو دل نہیں کرتا تھا۔ ایک کلومیٹر کے فاصلے پر بھی بائیک [...]

بالوں کے مسائل ۔ بال گرنا، سفید، خشکی اور ڈینڈرف ۔ ہومیوپیتھک دوائیں ۔ حسین قیصرانی

By |2020-09-16T14:31:44+05:00April 10, 2020|Categories: Homeopathy in Urdu, Skin and Hair|

بال گرنا آج کل اتنا عام ہے کہ تقریباً ہر دوسرا انسان بالخصوص ہر دوسری خاتون اس مسئلے کا شکار ہے۔ یہ علامت عام طور پر بالوں کو اپنی غذائیت نہ ملنے کے سبب پیدا ہوتی ہے۔ سر میں خشکی، سکری اور بفہ (Dandruff) پیدا ہونے سے بھی بال گرنے لگتے ہیں۔ مستقل خارش، کھجلی اور جلد کی بیماریاں بھی بال گرنے کا سبب بنتی ہیں۔ بعض مرض مثلا ٹائیفائڈ بخار یا کینسر کیموتھراپی کے بعد بھی سر بلکہ تمام بدن کے بال گر سکتے ہیں۔ بال گرنے کا کامیاب، صحیح اور مستقل علاج تب ہی ہو سکتا ہے کہ جب اس کے پیچھے جاری سبب یا وجہ کو ڈھونڈ کر سمجھا اور حل کیا جائے۔ بالوں کے گرنے کی بے شمار وجوہات ہو سکتی ہیں تاہم پاکستان کے ماحول اور کلچر میں جو عام دیکھی ہیں وہ یہ ہیں: ڈپریشن، انگزائٹی، ٹینشن، نزلہ زکام الرجی، دوائیوں کا لمبا استعمال، جذبات کو سپریس کرنا، بہت زیادہ حساسیت، شدید غم دکھ میں ہونا یا گزرنا، نوجوانی کی غلط کاریاں، مینوپاز، تھائیرائیڈ کے مسائل، مستقل سر درد، میگرین، ہارمون کی خرابی، لیکوریا، نیند کی کمی، حمل، بچے کی پیدائش اور دودھ پلانے کے دوران۔بال گرنے یا مردوں میں گنجہ پن کا سبب [...]

موٹاپا ۔ 35 کلوگرام وزن کم ۔۔ شوگر، بلڈ پریشر، پینک اٹیک، انگزائٹی، شدید کھانسی اور معدہ خرابی مکمل کنٹرول ۔ فیڈبیک ۔ احمد زمان اٹک۔

By |2020-04-28T01:09:43+05:00April 3, 2020|Categories: Digestive System, Homeopathy in Urdu, Mental Health, Testimonials|

  مکمل کیس اور تفصیلات کے لئے یہاں کلک کریں۔ احمد زمان صاحب کا فیڈبیک میری ڈاکٹر حسین قیصرانی سے شناسائی سوشل میڈیا کے ذریعے 2018میں ہوئی۔ میں ویب سائٹ پر ان کے کیسز پڑھتا رہا اور اپریل 2019 میں علاج کے لیے رابطہ کیا۔ اس وقت میرا وزن 135 کلوگرام تھا اور کمر کا سائز 54 انچ۔ میں بیک وقت شوگر، بلڈ پریشراور معدے کے لیے صبح شام کئی ایلوپیتھک ڈرگز کا استعمال کر رہا تھا مگر میرے مسائل کم ہونے کی بجائے مزید بڑھ  رہے تھے۔ مستقل شدید خشک کھانسی اور جلد کے اندر محسوس ہونے والی خارش بہت تکلیف دہ تھی۔ الحمدللہ ڈاکٹر صاحب کے علاج سے میرے اکثر مسائل مکمل طور پر حل ہو چکے ہیں اور میں بالکل ایک نئے انداز کا انسان بن چکا ہوں۔ مجھے یہ تفصیل شئیر کرتے ہوئے بہت خوشی محسوس ہو رہی ہے۔ 1۔ میرا بہت آگے نکلا ہوا پیٹ واپس اپنے مقام پر آ چکا ہے۔ بے پناہ موٹاپا اب ختم ہو گیا ہے۔ میں نے 35 کلوگرام سے زائد وزن کم کیا ہے اور میری کمر کا سائز 54 انچ سے کم ہو کر 38 انچ ہو گیا ہے۔ 2۔ پہلے میں کھانے پینے میں شدید ندیدے پن کا شکار تھا۔ اندازہ ہی نہیں [...]

March 2020

زندگی کا مزہ آنے لگا ہے ۔ فیڈبیک

By |2020-03-09T00:25:46+05:00March 8, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|

اسلام وعلیکم سر۔ آپ کے علاج میں کوئی شک نہیں۔ مجھے پہلے ماہ میں ہی واضح تبدیلیاں ملنا شروع ہو گئی تھیں۔ اب ہمیں 4 ماہ ہو گئے ہیں اور میں اپنے آپ کو فٹ محسوس کرتا ہوں۔ ایک دو چیزیں رہتی ہیں وہ اب فوکس کر لیں گے ۔جو مسائل بہتر ہوۓ ہیں وہ آپ کو لسٹ بنا کر بھیج رہا ہوں۔ ۔1 میری بھوک بہت بہتر ہوئی ۔2 مجھے پیاس بالکل نہیں لگتی تھی اب میں ٹھیک ٹھاک پانی پی لیتا ہوں ۔3 کام کاج کو خاص دل نہیں کرتا تھا مگر اب ہر کام دل جمعی سے کر پاتا ہوں ۔4 پہلے میرے مزاج میں غصہ (Anger) اور انزائٹی (Anxiety) بہت تھی اب خوشی اور نرمی آ گئی ہے۔ ۔5 پہلے کسی کام کو کرنے کی قوت ارادی کم تھی اب جس کام کا ارادہ کر لوں اللہ کے کرم سے وہ میرے لیے کرنا مشکل نہیں رہا۔ ۔6 پہلے فیصلے کرنے میں ڈبل ماینڈڈ (Double Minded and Confused) رہتا تھا مگر اب واضح فیصلے کر پاتا ہوں۔ ۔7 اپنے فیصلے اور اردے پر ڈٹ جانے کی صلاحیت بھی پیدا ہو گئی ہے جو کہ پہلے بہت کم تھی۔ ۔8 بال گرنے (Hair Fall Controlled) میں بھی [...]

February 2020

By |2020-02-29T15:14:04+05:00February 29, 2020|Categories: Digestive System, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES|

میری عمر 25 سال ہے۔ میں ایک ہاؤس وائف ہوں۔ تعلق کراچی سے ہے لیکن شادی کے بعد مجھے لاہور آنا پڑا۔ میرے مسئلے کا آغاز بیس سال کی عمر میں ہوا۔ مجھے اپنے جسم میں مختلف تبدیلیوں کا احساس ہونے لگا۔ میرا وزن بڑھنے لگا۔ مینسز، حیض میں بے قاعدگی (irregular menstrual cycle) آنے لگی۔ میری جلد بہت حساس (sensitive skin) ہو گئی اور اکثر الرجی (Allergy) رہنے لگی۔ ان تبدیلیوں نے جہاں میرے جسم کو نقصان پہنچایا وہاں ذہن بھی متاثر ہوئے بغیر نہ رہ سکا۔ اس ساری صورت حال نے مجھے دقیانوسی بنا دیا اور میں بہت زیادہ منفی سوچنے لگی۔ مجھ پر ہر وقت مایوسی (depression) طاری رہتی۔ میں پریشانی اور ذہنی دباؤ (mental stress) کا شکار رہتی۔ ان تمام تکلیف دہ مسائل کا نتیجہ ایک انتہائی اذیت ناک بیماری بواسیر (piles / hemorrhoids) کی شکل میں نکلا۔ پچھلے دو سال سے میں ان تمام مسائل سے دوچار تھی اور ہومیوپیتھک علاج کروا رہی تھی۔ لیکن بواسیر کی علامات کے تحت دی جانے والی ادویات مجھے آرام دینے میں ناکام رہیں۔ پچھلے سال حمل کے دوران میری حالت بہت خراب تھی اور ڈیلوری کے بعد تو صورت حال نہایت ابتر ہو گئی۔ خونی بواسیر نے میرا جینا [...]

رحم کی رسولیاں، فبرائیڈ، سر درد، کمر درد اور ہارمون کے مسائل ۔ كامیاب كیس، علاج اور دوا ۔ حسین قیصرانی

By |2020-02-13T12:17:50+05:00February 10, 2020|Categories: Genitourinary, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES|

Click HERE For Original / English Version of this Case. A Solved Case of Polycystic Ovary Syndrome (PCOS), Uterine Fibroids and Ovarian Cysts – Homeopathic Treatment and Medicine (Hussain Kaisrani) (رواں اردو ترجمہ: محترمہ مہرالنسا) ڈنمارک (Denmark) کی رہائشی، دو بچوں کی والدہ، ڈاکٹر مسز خان نے علاج کے لئے فون پر رابطہ کیا۔ اسی سال ہی وہ اپنی پی ایچ ڈی (PhD) مکمل کر کے وہاں کی مشہور یوینورسٹی میں ریسرچ آفیسر تعینات ہوئی تھیں۔ گزشتہ چند سالوں کی بے پناہ مصروفیت نے انہیں ڈسٹرب کر دیا تھا۔ وہ سوچتی تھیں کہ تعلیم مکمل ہوتے ہی ایک اطمینان اور سکون والی زندگی کے مزے لوٹیں گی مگر اب جب وہ فارغ ہوئیں تو اندازہ ہوا کہ مزے تو کیا وہ روٹین لائف بھی نہیں چلا سکتیں۔ سب سے اہم مسئلہ تو رحم میں رسولیوں (Ovarian Cysts) ، (PCOD / PCOS) اور فائبرائیڈ (Fibroid) کا تھا تاہم اس کے علاوہ بھی وہ کئی جسمانی، جذباتی، ذہنی اور نفسیاتی تکلیفوں (Physical, emotional imbalances) میں پھنسی ہوئی تھیں۔ گزشتہ کئی سالوں سے وہ اس قدر مصروف رہیں اور پھر جوش جذبہ بھی خوب تھا تو مسائل پر مناسب توجہ دینے کا موقع ہی نہ مل سکا۔ اِدھر تھوڑی سی تکلیف ہوئی؛ اُدھر کوئی [...]

مائیگرین، درد شقیقہ یعنی آدھے سر کا درد ۔ کامیاب کیس، ہومیوپیتھک دوائیں اور علاج ۔ حسین قیصرانی

By |2020-02-04T23:34:05+05:00February 4, 2020|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, Neurological, SOLVED CASES|

وہ مرکز تھی کالج کی ساری سکھیوں کا کیوں نہ ہوتی وہ تھی ہی ایسی قدرت نے دلکش رنگوں سے اسے تراشا تھا کشمیری چہرے پہ آنکھیں غزل سناتی تھیں ہنستی تھی تو جھرنوں سے آوازیں آتی تھیں سنگی ساتھی سارے اس کے گرد منڈلاتے تھے اس کے ناز اٹھاتے تھے وہ مرکز جو تھی نازاں تھی اور ناداں بھی بھول گئی تھی مرکز کو تو بالآخر تنہا جلنا پڑتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔!۔ اہم ہونا کسے اچھا نہیں لگتا لیکن اگر ہم اہم ہونے کے ساتھ ساتھ حساس بھی ہوں تو نتائج مختلف بلکہ پریشان کن ہو سکتے ہیں۔ ہمارے دوست، ہمارے چاہنے والے اور دکھ سکھ کے ساتھی ہمارے دل میں ایک خاص جگہ بنا لیتے ہیں۔ ہمیشہ یہ احساس دلانے والے ساتھی کہ وہ ہمارے بغیر نہیں رہ سکتے، وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ اپنی اپنی منزل کی جانب ہجرت کرنے لگتے ہیں لیکن ان کے پیچھے رہ جانے والے دکھ ہجرت نہیں کرتے بلکہ اندر سرایت کرنے لگتے ہیں۔ اور غیر محسوس انداز میں ہمارے ذہن کے کسی کونے میں اپنا ٹھکانہ بنا لیتے ہیں؛ خاموشی سے ہماری شخصیت کے تانے بانے بکھیرنے لگتے ہیں اور یہ سلسلہ چلتا رہتا ہے تاوقتیکہ کوئی ان کے ٹھکانے تک نہ [...]

Load More Posts