31 05, 2018

امتحان، سٹیج، انٹرویو اور پریزینٹیشن کے ڈر، خوف، فوبیا اور تشویش کا کامیاب ہومیوپیتھک علاج – حسین قیصرانی

By |2019-03-31T14:04:56+05:00May 31, 2018|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health, SOLVED CASES, Testimonials|0 Comments

ایم فل کی ایک سٹوڈنٹ نے فون پر رابطہ فرمایا۔ انہوں نے تقریباً روتے ہوئے اپنا مسئلہ ڈسکس کیا: صبح یونیورسٹی میں میری فائنل پریزینٹیشن (Presentation) ہے جس کے لئے میں نے پچھلے تین ماہ دن رات ایک کر دیا۔ میری تیاری ہر طرح سے مکمل ہے اور کل اپنے سپروائزر سے تفصیلی نشست ہوئی۔ مَیں نے اُن سے ایسے تمام نکات پر بات کی کہ جو مجھے واضح نہیں تھے۔ انہوں نے مجھے بڑی وضاحت سے سب کچھ سمجھایا۔ اب یہ حالت ہے کہ مجھے اپنے سوالات تو پوری طرح یاد ہیں مگر سپروائزر نے جو راہنمائی کی؛ اُس کا ایک لفظ بھی ذہن میں نہیں آ رہا۔ میرا دماغ بالکل خالی ہے۔ پریزینٹیشن کا مجھے کچھ یاد ہی نہیں آ رہا۔ میں مستقل کانپ رہی ہوں اور میرا رنگ سفید ہو رہا ہے۔ اچانک بے پناہ سستی اور کمزوری محسوس ہونا شروع ہو گئی ہے۔ انگزائیٹی (Anxiety) اور ڈیپریشن (Depression) بڑھتا جا رہا ہے۔ مجھے لگ رہا ہے کہ میں اِس قابل نہیں ہوں کہ کل یونیورسٹی جا سکوں۔ اگر کسی طرح پہنچ بھی گئی تو مجھے پتہ ہے کہ میرے منہ سے رونے کے علاوہ کوئی لفظ نہیں نکلے گا۔ میری بہن نے مشورہ دیا ہے کہ [...]

31 05, 2018

Homeopathic Remedy ARGENTUM NITRICUM (ارجنٹم نائٹریکم) – The Essence of Materia Medica – George Vithoulkas

By |2020-11-12T13:18:06+05:00May 31, 2018|Categories: George Vithoulkas, Materia Medica, Professional|0 Comments

Argentum nitricum (arg-n.) The central idea of the Arg. nit. patient is a person who has a weakness on the mental sphere which is most obvious when a challenge appears. This is a mental weakness accompanied by an emotional state of excitability and nervousness and impulsiveness. His mental faculties are weak while his feelings are over-strong. Such a combination produces a person who is ready to act on any idea which happens to flit through his mind, no matter how ridiculous it may be. The patient may be sitting on a balcony and suddenly the idea comes to mind; “What if I were to fall”? This idea sticks in his mind and in his imagination he produces the whole scene of falling to the ground and SEEING HIMSELF CRUSHED FULL OF BLOOD etc. Finally, he becomes overwhelmed with this image until he has the actual impulse to jump in order to see what it would be like. He may even make a move toward the edge, but at this moment he comes to his senses – full of fear. He goes inside and he closes the window. Another example of this combination of weakness and excitability might be a man [...]

31 05, 2018

Homeopathic Remedy ALUMINA (ایلومینا) – The Essence of Materia Medica – George Vithoulkas

By |2018-05-31T00:39:15+05:00May 31, 2018|Categories: George Vithoulkas, Materia Medica, Professional|0 Comments

Alumina (alum.) Alumina is a unique remedy often under-appreciated by beginning prescribers. It is characterized by DELAYED ACTION both internally on the mental plane, and externally on the central and peripheral nervous systems. The idea is SLOWNESS of function followed eventually by PARALYSIS. This is a very slow onset. The patient may not realize that anything is wrong for a long time; she may feel a vague “heaviness” in the legs about which she doesn’t complain until it has developed into locomotor ataxia. The most striking aspect of the mental picture is the great SLOWNESS of mind. She is slow to comprehend things, then slow in figuring out how to proceed to accomplish her task, and slow in its execution. The slowness of mind results in a peculiar kind of confusion which is unique to Alumina. The ideas are very vague, and hazy, like undefined shadows. You may see a patient who has difficulty in swallowing. But when you ask her to describe the trouble, she becomes halting and indecisive. She thinks a long time, tries this word and that, struggling to find the correct word to describe what she is feeling. This difficulty in expressing what is happening is [...]

28 05, 2018

– ہومیوپیتھی علاج کے تقاضے اور ہومیوپیتھک ڈاکٹر کی مشکلات – حسین قیصرانی

By |2018-05-28T12:51:54+05:00May 28, 2018|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu|1 Comment

ڈاکٹر کے مخلص اور ماہرِ فن ہونے کے ساتھ ساتھ مریض کا سمجھ دار اور تعلیم یافتہ ہونا ہومیوپیتھک علاج کا ایک اہم ترین تقاضا ہے۔ دونوں میں سے اگر ایک بھی اس شرط کو پورا نہیں کرتا تو اچھے نتائج کا حاصل ہونا بہت مشکل ہو جاتا ہے۔ اِس کو ذرا وضاحت سے ڈسکس کرتے ہیں۔ ہومیوپیتھک ڈاکٹر اگر اپنے فن کا ماہر نہیں ہے اور مریض بھی سمجھدار نہیں ہے تو تکلیف اور مرض کم ہونے کے بجائے مزید پیچیدہ ہو جائے گا۔ اگر معالج کو اپنے کام پر عبور ہے مگر مریض جاہل ہے تو ڈاکٹر کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا۔ بہت زیادہ امکان یہی ہے کہ پورے خلوص اور محنت کے باوجود مریض کو مکمل شفا حاصل نہ ہو گی۔ اور تیسری صورت میں (کہ جب معالج میں صلاحیتوں کی کمی ہے) تو کوئی تعلیم یافتہ، سمجھدار مریض کسی ایسے ڈاکٹر کے پاس نہیں جائے گا جو اپنے فن کا ماہر نہ ہو۔ پاکستان کی ستر فیصد آبادی کو اَن پڑھ یا غیر تعلیم یافتہ شمار کیا جاتا ہے اور ہمارے ہاں پڑھے لکھے جاہلوں کی بھی کوئی کمی نہیں ہے۔ ان حالات میں ماہر، مخلص اور محنتی ہومیوپیتھک ڈاکٹر کو بہت مشکلات [...]

24 05, 2018

– پاکستان میں پانچ لاکھ مریضوں کے لیے ایک نفسیاتی معالج – عابد حسین

By |2018-05-25T02:02:03+05:00May 24, 2018|Categories: Mental Health|0 Comments

22 سالہ صبا کو کھانا دیکھتے ہی گھبراہٹ ہونے لگتی تھی۔ کسی بھی قسم کا کھانا اپنے سامنے دیکھتے ہی ان کو جیسے متلی کی کیفیت محسوس ہونے لگتی تھی۔ ان کو ایسا لگتا تھا کہ شاید کھانا ان کے حلق میں پھنس جائے گا اور انھیں پھندا لگ جائے گا۔ بی بی سی سے بات کرتے ہوئے انھوں نے بتایا: 'مجھے کھانے کی کوئی شے دیکھتے ہی ڈر لگنے لگا تھا۔ اسے دیکھتے ہی مجھے ہول اٹھتا تھا کہ اگر میں اس کے قریب بھی گئی تو مجھے کچھ ہو جائے گا۔ اور اس ڈر و خوف اور اضطرابی کیفیت نے میری زندگی ایسی اجیرن کر دی جس کا میں تصور بھی نہیں کر سکتی تھی۔' صبا( فرضی نام)، جو خود بھی ڈاکٹر ہیں، جس کیفیت سے گزر رہی تھیں اسے طب کی زبان میں 'اینگزائیٹی' یا 'اضطرابی' کیفیت کہتے ہیں اور وہ پاکستان میں ایسے لاکھوں کم عمر افراد میں شامل ہیں جو ذہنی امراض کا سامنا کر رہے ہیں۔ لیکن تیزی سے بڑھتے ہوئے اس مسئلے کے حل کے لیے نہ صرف پاکستان میں ذہنی صحت کے لیے ماہر نفسیات کا شدید فقدان ہے بلکہ شاید اس سے بھی بڑی رکاوٹ اس سماجی طرز عمل کی ہے [...]

23 05, 2018

پاکستان میں ذہنی اور دوستوں کا دباؤ منشیات کے استعمال کی اہم وجہ – ریاض سہیل

By |2018-05-26T14:43:50+05:00May 23, 2018|Categories: Misc|0 Comments

کراچی میں آپ کو اکثر فلائی اوورز کے نیچے، لیاری ندی کے کناروں پر اور بعض علاقوں کے میدانوں میں لوگ سر پر چادر اوڑھے دھواں پھونکتے ہوئے نظر آئیں گے۔ ان کے کپڑے میلے کچیلے اور بال مٹی اور دھول سے اٹے ہوتے ہیں۔ منشیات کے عادی ان افراد کے حلیے اور ٹھکانوں سے تو اکثر لوگ باخبر اور واقف ہیں لیکن شہر کے پوش علاقوں میں اعلیٰ درس گاہوں کے نوجوان بھی منشیات میں مبتلا ہو رہے ہیں، جس سے والدین اور متعلقہ محکمہ لاعلم رہتے ہیں۔ شہر میں منشیات کے عادی افراد کی بحالی کے مراکز میں ان دنوں ایک نئے نشے کے عادی نوجوانوں کو لایا جا رہا ہے، جسے کرسٹل میتھ کہا جاتا ہے۔ اس کا شکار عموماً نجی تعلیمی اداروں اور امیر گھرانوں کے نوجوان بن رہے ہیں۔ ایسے ہی ایک بحالی مرکز میں ایک نوجوان (جے) سے ملاقات ہوئی جو اپنے ہم جماعت کے ذریعے کرسٹل کا عادی بنا تھا۔ ’یونیورسٹی میں داخلہ ہوا وہاں ایک نیا ماحول تھا، میرے کلاس فیلوز کوئی چیز استعمال کرتے تھے۔ ان سے جب میری دوستی ہوئی تو انھوں نے آہستہ آہستہ مجھے اس کے استعمال کے لیے آمادہ کر لیا۔ جیسے جیسے میں نے وہ چیز [...]

23 05, 2018

جسمانی بیماریاں بمقابلہ ذہنی، نفسیاتی اور جذباتی مسائل – میرا نقطہ نظر (حسین قیصرانی)۔

By |2018-05-23T01:07:24+05:00May 23, 2018|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Mental Health|0 Comments

جب مرض، مریض کے اندر گہرائی تک اثر کر جاتا ہے تو بہت سی جسمانی تکلیفیں اور علامات تو غائب ہو جاتے ہیں مگر ذہنی، نفسیاتی اور جذباتی علامات اور بیماریاں ظاہر ہونے لگتی ہیں۔ جب نیند کی مستقل خرابی، بے وجہ غصہ، صحت کے متعلق انگزائٹی، تشویش، ڈپریشن، کینسر کا ڈر، اَن جانا خوف یا موت کا ڈر مسلسل حملہ آور ہونے لگتے ہیں تو نزلہ، زکام، بخار یا سر درد وغیرہ گم ہو جایا کرتے ہیں۔ (خوف ایسے ڈر کو کہتے ہیں جس کی وجہ معلوم ہو؛ چاہے وہ وجہ معقول ہو یا محض وہم۔ حزن اُس ڈر کو کہتے ہیں کہ جو بے وجہ ہو یعنی دل ہے کہ ڈوبا جا رہا ہے۔ بس دھڑکا لگا رہتا ہے کہ کچھ ہونے والا ہے۔ پروردگار ہم سب کو ڈر اور خوف جیسی نفسیاتی بیماریوں سے محفوظ رکھے)۔ (حسین قیصرانی ۔ سائیکوتھراپسٹ & ہومیوپیتھک کنسلٹنٹ - لاہور پاکستان فون نمبر 03002000210)

18 05, 2018

– مرض کا دب جانا – ڈاکٹر بنارس خان اعوان Suppression

By |2018-05-22T00:04:27+05:00May 18, 2018|Categories: Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Professional|0 Comments

محترم ڈاکٹر حضرات! جنوبی پنجاب کے اس چھوٹے سے شہر دریاخان میں پنجاب سرحد اور سندھ کے دور دراز علاقوں سے اتنی بڑی تعداد میں ڈاکٹر حضرات کا اجتماع بلاشبہ ڈاکٹر جنید عمر اور ڈاکٹر راؤ محمد اخترکی کاوشوں کا نتیجہ ہے۔ یہ ڈاکٹر صاحبان ما شاء اللہ بڑی محنت، لگن اور دلچسپی سے کئی چھوٹے بڑے سیمینار منعقد کرا چکے ہیں۔ یہ سیمینار ان کے ہومیوپیتھی سے محبت کا ثبوت ہیں جو ہر کسی کے بس کی بات نہیں۔ ان کے اس جذبے کی جتنی بھی تعریف کی جائے کم ہے۔ ان کے ساتھ ان کی ساری ٹیم اور ایشین ہومیوپیتھک میڈیکل لیگ پاکستان ونگ کے صدر ڈاکٹر اظہر انتصار بھی مبارکباد کے مستحق ہیں۔ ڈاکٹر A.H.Grimmer نے لکھا ہے۔ ہومیوپیتھی خدا کی طرف سے اس کے بندوں کے لئے تحفہ ہے۔ ہومیوپیتھی محبت، امن اور خدمت کا استعارہ ہے، آفاقی طریقہ علاج ہے۔ جارج وتھالکس کا کہنا ہے۔ ہومیوپیتھک پریکٹس کا مقصد لوگوں میں خوشیاں بانٹنا ہے۔ مشہور خلیفہ ہارون رشید کو بغداد کے مشہور درویش بہلول دانا نے کہا تھا؛ جب خدا کسی بادشاہ پر خوش ہوتا ہے تو وہ اسے عقل دیتا ہے۔ جوناتھن شور (امریکی ہومیوپیتھک ڈاکٹر) نے کہا ہے کہ خدا جب کسی سے [...]

18 05, 2018

چار سال بعد پہلا روزہ – آن لائن کلائنٹ کا فیڈبیک

By |2018-05-18T00:22:07+05:00May 18, 2018|Categories: Mental Health, Testimonials|0 Comments

اور سر جی میں نے آج روزہ رکھا تھا۔۔ ۔ سب کچھ بہتر تھا ۔۔۔ صرف کمزوری لگ رہی تھی۔۔ پاوں سو جاتا تھا سر میں چکر ہلکے سے۔ اور کوئی مسئلہ نہیں ہوا۔۔۔۔۔۔ سر جی! چار سال بعد مَیں نے روزہ رکھا ہے یہ بات آپ کے علم میں لے آوں۔۔۔ مجھ سے روزہ نہیں رکھنے ہوتا تھا ۔۔۔۔ یہ روزہ بھی سب سے لمبا تھا مگر مجھے پتہ ہی نہیں چلا ۔۔۔۔۔ سحری کے وقت میں نے سحری کی ۔۔۔ اور sos لے لی تھی ۔۔۔۔ نہ بھوک لگی نہ پیاس لگی مجھے نہ ہی کوئی گھبراہٹ ہوئی ۔۔۔۔۔ حسین قیصرانی – سائیکوتھراپسٹ & ہومیوپیتھک کنسلٹنٹ، لاہور پاکستان ۔ فون 03002000210

11 05, 2018

گندم گلوٹین الرجی – سیلیک ڈیزیز- ہومیوپیتھک علاج – فیڈبیک

By |2019-04-25T14:45:27+05:00May 11, 2018|Categories: Autoimmune Disorders, Children's Diseases, Homeopathic Awareness, Homeopathy in Urdu, Testimonials|0 Comments

گندم الرجی (Celiac disease / gluten-sensitive enteropathy / autoimmune disorder) کیا ہے؛ اِس سے متاثرہ بچوں اور اُن کے والدین کی زندگی کس طرح کے مسائل سے دوچار ہوتی ہے؛ اُس کا اندازہ عام لوگ لگا ہی نہیں سکتے۔ سرِدست والدین کا فیڈبیک ملاحظہ فرمائیں جن کی بیٹی کو گندم سے الرجی ہے۔ انہوں نے مختلف ہسپتالوں اور ڈاکٹرز سے سالہا سال علاج کروایا مگر آخر کار نتیجہ یہ نکلا کہ بچی کو گندم کی الرجی ہے۔ نوبت یہ ہو گئی تھی کہ اگر کسی ایسے برتن میں آٹا گوندھا گیا کہ جس میں پہلے گندم کا آٹا صرف رکھا گیا تھا تو بھی بچی کی صحت بہت خراب ہو جایا کرتی تھی۔ اُس کے برتن ہر لحاظ سے الگ تھلگ کر لئے گئے۔ عرصہ تین سال سے یہ احتیاط جاری تھی۔ والدین نے کافی جرات کی اور بیٹی کے علاج کے لئے رابطہ کیا۔ ہومیوپیتھک علاج کے دو ہفتے کے اندر گندم اور جَو بیٹی کے کھانے میں شامل کی جانے لگی۔ کل رات سے خالص گندم کی روٹی کھلائی گئی۔ الحمد للہ! بچی کو ذرا سا بھی کوئی مسئلہ نہیں ہوا۔ بچی کو نارمل انداز میں گندم سمیت ہر طرح کی خوراک مستقل جاری ہو گئی ہے۔ اللہ [...]